آسٹریلیا سے ہار، پاکستان کے ساتھ آفریدی کا بھی کھیل ختم

شاہد آفریدی
شاہد آفریدی

موہالی (پنجاب)، ۲۵ مارچ (سی این ایم) جیمز فاؤکنر (۵-۲۸) کی بہترین گیندبازی كےدم پر آسٹریلیائی کرکٹ ٹیم نے جمعہ کو یہاں پنجاب کرکٹ ایسوسی ایشن کے میدان پر کھیلے گئے آئی سی سی ٹی-۲۰ ورلڈ کپ کے سپر-۱۰ راؤنڈ کے گروپ -۲ مقابلے میں پاکستان کو ۲۱ رنوں سے ہرا دیا. پاکستانی ٹیم ۱۹۴ رنوں کے بڑے اسکور کا تعاقب کرتے ہوئے ۲۰ اووروں میں ۸ وکٹ پر ۱۷۲ رن ہی بنا سکی.

اس ہار کے ساتھ ہی جہاں پاکستان کے سیمی فائنل میں پہنچنے کی امیدیں ختم ہو گئی ہیں وہیں تیز شاٹ کھیلنے کے لیے مشہور شاہد آفریدی کا کھیل بھی قریب قریب اختتام کو پہنچ گیا. اب ٹیم انڈیا اور آسٹریليا کے درمیان ۲۷ مارچ کو ہونے والے مقابلے کا فاتح ہی نيوزی لینڈ کے ساتھ گروپ-۲ سے اگلے مرحلے میں داخل ہوگا.
پاکستانی ٹیم کی شروعات اچھی نہیں رہی. احمد شہزاد (۱) کا وکٹ ۲۰ کے مجموعی اسکور پر گر گیا. ایک سرے پر حالانکہ شرجيل خان (۳۰) بہترین شاٹس لگا رہے تھے اورجب تک ۴۰ کے مجموعی اسکور پر وہ آؤٹ ہوئے انہوں نے رن ریٹ کو فی اوور آٹھ کے قریب برقرار رکھا، لیکن کوئی دوسرا کھلاڑی ٹھیک ڈھنگ سے ان کا ساتھ نہیں دے سکا۔

شرجيل نے ۱۹ گیندوں پر چھ چوکے لگائے. ان کے آؤٹ ہونے کے بعد عمر اکمل (۳۲) اور خالد لطیف (۴۶) نے تیسرے وکٹ کے لیے ۴۵ رن جوڑے.

اکمل ۲۰ گیندوں پر تین چوکے اور ایک چھکا لگانے کے بعد ۸۵ کے مجموعی اسکور پر آؤٹ ہوگئے. ان کی جگہ لینے آئے کپتان شاہد آفریدی (۱۴ رن، ۷ گیند، ۲ چھکے) نے کھل کر ہاتھ دکھائے لیکن وہ اپنی ٹیم کو جیت نہیں دلا سکے.

کپتان کے جانے کے بعد لطیف اور شعیب ملک (ناٹ آؤٹ ۴۰، ۲۰ گیند، ۲ چوکے، ۲ چھکے) نے تیزی سے رن بناتے ہوئے ۳۷ رن جوڑے. ۱۳۷ کے مجموعی اسکور پر لطیف صبر کا دامن چھوڑ بیٹھے. لطیف نے ۴۱ گیندوں پر چار چوکے اور ایک چھکا لگایا. یہ پاکستان کا پانچواں وکٹ تھا. اس کے بعد پاکستانی ٹیم تمام کوششوں کے بعد بھی مزید ۳۵ رنوں کا اضافہ نہیں کر سکی. لطیف کے بعد آئے چار میں سے تین بلے باز دہائی کا ہندسہ بھی نہیں چھو سکے.

مین آف دی میچ قرار دیے گئے فاؤکنر کے علاوہ ایڈم زمپا نے دو وکٹ لیے. اس سے قبل، ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کرتے ہوئے آسٹریلیا نے مقررہ ۲۰ اووروں میں چار وکٹ کے نقصان پر ۱۹۳ رن بنائے.

آسٹریلیا کی جانب سے کپتان اسٹیون اسمتھ نے ناٹ آؤٹ ۶۱، گلین میکسویل نے ۳۰، شین واٹسن نے ناٹ آؤٹ ۴۴ اور عثمان خواجہ نے ۲۲ رن بنائے.

اس میچ میں میکسویل اور اسمتھ نے چوتھے وکٹ کے لیے ۶۲ اور اسمتھ اور واٹسن نے پانچویں وکٹ کے لیے ۷۴ رن جوڑے. یہ شراکت ۳۸ گیندوں کا نتیجہ رہی. واٹسن نے ۲۱ گیندوں پر چار چوکے اور تین چھکے لگائے جبکہ اسمتھ نے ۴۳ گیندوں پر سات چوکے لگائے. میکسویل نے ۱۸ گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے تین چوکے اور ایک چھکا لگایا. خواجہ اور ایرن فنچ (۱۵) نے پہلے وکٹ کے لیے ۲۸ رن جوڑے تھے. ڈیوڈ وارنر (۹) کچھ خاص نہیں کر سکے. پاکستان کی جانب سے وہاب ریاض اور عماد سلیم نے دو دو وکٹ لیے.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *