اتراکھنڈ سے جلد ہی ختم ہوسکتا ہے صدر راج، مرکز کا اشارہ

Harish Rawat PC

نئی دہلی، ۶ مئی (نامہ نگار): مرکزی حکومت اتراکھنڈ میں کانگریس کو اسمبلی کے اندر اپنی اکثریت ثابت کرنے کا موقع فراہم کر سکتی ہے۔ یہ بات آج اٹارنی جنرل مکل روہتگی نے سپریم کورٹ کو دی۔ اس سے قبل سپریم کورٹ میں سماعت کے دوران مرکز نے اتراکھنڈ کے سیاسی بحران پر اپنا جواب داخل کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ فلور ٹیسٹ پر سنجیدگی سے غور کر رہی ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں نینی تال ہائی کورٹ نے اتراکھنڈ میں صدر راج ہٹانے کا فیصلہ دیا تھا، جس کے خلاف مرکزی حکومت سپریم کورٹ چلی گئی تھی۔ اس معاملہ پر سماعت کرتے ہوئے سپریم کورٹ نے نینی تال ہائی کورٹ کے فیصلہ کو ردّ کرتے ہوئے وہاں دوبارہ صدر راج نافذ کر دیا تھا اور مرکزی حکومت سے فیصلہ کی کاپی جمع کرنے کے لیے کہا تھا۔ منگل کے روز سپریم کورٹ نے مرکز سے پوچھا تھا کہ کیوں نہ پہلے کورٹ کی نگرانی میں فلور ٹیسٹ کرایا جائے۔

اتراکھنڈ ہائی کورٹ نے مرکزی حکومت پر سخت تنقید کرتے ہوئے صوبہ سے صدر راج ہٹانے کا حکم صادر کیا تھا۔ عدالت نے کہا تھا کہ صوبہ میں ۱۸ مارچ سے پہلے کی صورت حال بنی رہے گی۔ تب ہریش راوت ایک بار پھر صوبہ کے وزیر اعلیٰ بن گئے تھے اور انھیں ۲۹ اپریل کو اسمبلی میں اپنی اکثریت ثابت کرنے کا حکم دیا گیا تھا۔ لیکن مرکزی حکومت کے ذریعہ رجوع کرنے پر سپریم کورٹ نے اس حکم پر روک لگا دی تھی، جس کے بعد اتراکھنڈ میں دوبارہ صدر راج نافذ ہو گیا تھا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *