بسوا کلیان میں عظمت اولیاء و اتحاد ملت کانفرنس کا انعقاد

محمد امین نواز
بیدر:
تاریخی روحانی و ادبی سرزمین بسوا کلیان پر جمعیۃعلماء ہند کے زیر اہتمام ’عظمت اولیاء و اتحاد ملت ‘کے عنوان سے قلعہ کے دامن میں ایک جلسہ منعقد کیا گیا۔ اس جلسہ کے مہمان خصوصی دارالعلوم دیوبند کے مبلغ مولانا یامین قاسمی تھے۔ انہوں نے اپنے خطاب میں کہا کہ ولایت کی سب سے بڑی پہچان تکبر سے پاک رہنا ہے۔ ولی میں عاجزی، انکساری اورسادگی کوٹ کوٹ کر بھری ہوئی ہوتی ہے۔ ولی صرف زندہ رہنے کے لیے کھاتا ہے، کھانے کے لیے نہیں جیتا ہے۔ ولی بننے میں ماں کا کردار بہت اہم ہوتا ہے۔ جس کی روزی حلال ہوتی ہے اور جس ماں کے دودھ میں تقویٰ ہوتا ہے، اس کا بچہ ولایت کے درجہ پر پہنچ جا تا ہے۔ جتنے اولیا ء کرام گذرے ہیں، ان کو ولی بنانے میں ان کی ماؤں کا حصہ رہا ہے۔ ماں کی گود کوپہلا مدرسہ کہا گیا ہے۔

مولانا قاسمی نے ملک میں بڑھتے ہوئے جرائم پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شراب، جوا، سود، رشوت یہ تمام چیزیں آج معاشرے کو تباہی کے دہانے پر لے جارہی ہیں۔ اسلام نے شراب کو تمام جرائم کی جڑ قرار دیا ہے۔ شرابی کی بیوی ہوتے ہوئے وہ بیوہ ہے۔ شرابی کے بچوں کا باپ ہوتے ہوئے وہ یتیم ہیں۔ شرابی عورت کا شوہر ہوتے ہوئے وہ محنت مزدوری کرنے پر مجبور ہے۔ یہ ملک اسی وقت ترقی کر سکتا ہے جب یہ تمام جرائم سے پاک ہو۔ جمعیۃ علماء ہند اس کی روک تھام کے لیے ملک بھر میں جلسہ جلوس منعقد کر رہی ہے۔
مفتی غلام یزدانی اشاعتی صدر جمعیۃ علماء بیدر اور مولانا محمد تصدق ندوی جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء بیدر نے بھی اس جلسہ میں خطاب کیا۔ مولانا عبدالسلام قاسمی نے جلسہ کی سرپرستی کی اور حافظ محمد اکبر علی صدر جمعیۃ علماء بسوا کلیان نے جلسہ کی نگرانی کا فریضہ ادا کیا۔ مولانا خلیل الرحمن جنرل سکریٹری جمعیۃ علماء بسوا کلیان نے نظامت کے فرائض انجام دیے۔ حافظ محمد مزمل کی قرأت سے جلسہ کا آغاز ہوا۔ حافظ عمران اور حافظ مجاہد نے نعت شریف کا نذرانہ پیش کیا۔ اس موقع پر سرکل انسپکٹر محمد علی اور پولس سب انسپکٹر گرو پاٹل بھی موجود تھے۔ جمعیۃ علماء بسوا کلیان کی جانب سے ان دونوں کی شال پوشی اور گل پوشی کی گئی۔ اسٹیج پر علماء کرام میں مولانا محمد حاجی قاسمی، حافظ میر فرخندہ علی اور محمد علیم انجم قانونی مشیر جمعیۃ علماء بسوا کلیان موجود تھے۔ مہمانِ خصوصی کی دعاء پر جلسہ بحسن و خوبی اختتام پذیر ہوا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *