بیدر ضلع میں سرکاری یونانی کالج کے قیام کا مطالبہ

بیدر سے منتخب اراکین اسمبلی و بیدر ضلع انچارج منسٹر ایشور کھنڈرے کی خصوصی دلچسپی ضروری ہے

محمد امین نواز
بیدر:
معروف ماہر تعلیم سید تنویر احمد نے بیدر ضلع میں سرکاری یونانی کالج کے قیام کا مطالبہ کیا ہے۔ اس کے لیے عوامی سطح پر تحریک چلائی جارہی ہے تاکہ امسال ریاستی حکومت کی جانب سے پیش کیے جانے والے بجٹ میں اس کی منظوری عمل میں آسکے ۔انہوں نے کہا ہے کہ بیدر ضلعکے اطباء زمانۂ قدیم ہی سے بین الاقوامی سطح پر مشہور ہیں ۔ان اطباء کے تجربات اور ادویات کی ایجاد کو بھی کافی مقبولیت حاصل ہے ۔
سید تنویر احمد نے کہا کہ طبِ یونانی میں کئی ایسے پیچیدہ امراض کا کامیاب علاج موجود ہے جو دوسرے طریقۂ طب میں اب تک دریافت نہیں کیے جاسکے ہیں۔ لیکن سرکاری سطح پر سرپرستی و حوصلہ افزائی سے محرومی کے باعث اس کی اہمیت و افادیت کھل کر منظر عام پر نہیں آرہی ہے ۔یونانی اطباء یونانی طب کے فروغ کے لیے جان توڑ کوشش کررہے ہیں اور اس کے بہتر نتائج بھی برآمد ہورہے ہیں ۔یونانی طریقۂ علاج کی خوبی یہ ہے کہ اس کے کوئی ذیلی اثرات نہیں ۔اس میں خاص طورپر امراض قلب، امراض جگر، رگوں و نسوں کے امراض و دیگر مہلک امراض کا کامیاب علاج موجود ہے ۔ریاستی حکومت کی جانب سے اس سلسلہ میں نمائندگی ضروری ہے اور نمائندگی کے لیے بیدر سے منتخب اراکین اسمبلی و بیدر ضلع انچارج منسٹر ایشور کھنڈرے کی خصوصی دلچسپی ضروری ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *