بی جے پی نومبر تک رام مندر قانون لائے گی : ملی گزٹ کا انکشاف

mg-mast-head
نئی دہلی، ۲۸؍ مارچ (پریس ریلیز) معروف انگریزی جریدہ ملی گزٹ نے اپنے نئے شمارہ (۱۔۱۵ اپریل) میں معتبر ذرائع کا حوالہ دیتے ہوئے اطلاع دی ہے کہ بی جے پی کی قیادت والی مرکزی حکومت امسال نومبر تک رام مندر قانون لا رہی ہے۔ملی گزٹ کے ایڈیٹر ڈاکٹرظفرالاسلام خان کی تحریرکردہ اس رپورٹ میں بتایاگیاہے کہ اس سلسلے میں ضروری تیاریاں بالخصوص ایک قانون کے مسودہ کی تیاری خاموشی سے جاری ہے۔
ڈاکٹرظفرالاسلام نے اپنی رپورٹ میں لکھا ہے کہ اس خبر کو بی جے پی لیڈرسبرامنیم سوامی کے پچھلے۱۶؍ جنوری کو انڈیا ٹی وی پر اس اعلان سے تقویت ملتی ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ اگلے دسمبرتک رام مندرکی تعمیرشروع ہوجائے گی۔ اس سے پہلے بی جے پی ایم پی ساکشی مہاراج نے بھی پچھلی۱۳؍جنوری کوکہاتھاکہ جب ہم ۲۰۱۹ میں الیکشن لڑنے جائیں گے تو رام مندربن چکا ہوگا۔ یادرہے کہ پچھلے کئی ماہ سے اجودھیاکے کیشوپورم میں رام مندربنانے کے لیے تراشے گئے پتھروغیرہ راجستھان سے آنے شروع ہوگئے ہیں۔
رپورٹ میں مزید کہا گیاہے کہ یہ بات واضح نہیں ہے کہ راجیہ سبھا میں اقلیت میں ہونے کے باوجود مودی حکومت کس طرح مجوزہ قانون پاس کرائے گی کیونکہ کسی قانون کو نافذالعمل بننے کے لیے لوک سبھا اور راجیہ سبھا دونوں سے اسے پاس کرانا پڑتاہے۔ فی الحال راجیہ سبھا میں بی جے پی کی صورت حال بدلنے کاکوئی امکان نہیں ہے۔
رپورٹ میں خدشہ ظاہرکیاگیاہے کہ اس قانونی رکاوٹ سے بچنے کے لیے مودی حکومت آرڈیننس کاسہارالے سکتی ہے۔ دوسرا امکان یہ ہے کہ راجیہ سبھا میں بل کوپاس نہ کرا پانے کو بڑا مسئلہ بنا کر بی جے پی ووٹروں کی ہمدردی حاصل کرنے کے لیے کہے گی کہ ریاستی اسمبلیوں اورپارلیمنٹ میں ہمیں اتنی کامیابی دو کہ راجیہ سبھا میں ہمیں اکثریت مل جائے اورہم جو بھی قانون چاہیں پاس کراسکیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *