بی جے پی پورے ملک میں صدر راج نافذ کرنا چاہتی ہے: کیجریوال

اروند کیجریوال، وزیر اعلیٰ دہلی
اروند کیجریوال، وزیر اعلیٰ دہلی

نئی دہلی، ۲۷ مارچ (نامہ نگار): دہلی کے وزیر اعلیٰ اروِند کجریوال نے آج مودی حکومت پر الزام لگاتے ہوئے کہا کہ وہ پورے ملک میں صدر راج نافذ کرنا چاہتی ہے۔ کیجریوال کا یہ تبصرہ اتراکھنڈ میں آج صدر راج نافذ کرنے کے بعد آیا ہے۔

کیجریوال نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا کہ ’’اعتماد کا ووٹ حاصل کرنے سے ایک دن پہلے صدر راج کا نفاذ؟ بی جے پی جمہوریت مخالف ہے۔ بی جے پی، آر ایس ایس ڈکٹیٹرشپ چاہتے ہیں، ہندوستان پر صدر راج کے ذریعہ حکومت کرنا چاہتے ہیں۔‘‘

عام آدمی پارٹی کے لیڈر آشوتوش نے بھی مرکزی حکومت کے اس فیصلہ پر تنقید کرتے ہوئے لکھا کہ یہ ’’جمہوریت کا قتل‘‘ ہے۔ انھوں نے ٹویٹ کیا کہ ’’اتراکھنڈ میں جو کچھ ہوا، وہ جمہوریت کا قتل ہے۔ کسی حکومت کے پاس اکثریت ہے یا نہیں، اس کی جانچ ایوان کے اندر ہونا چاہیے۔‘‘

انھوں نے یہ بھی کہا کہ ’’مودی حکومت کسی بھی حالت میں مخالف حکومتوں کو دیکھنا نہیں چاہتی۔ اروناچل پردیش کے بعد اتراکھنڈ حکومت کو برخاست کرنا ایک خطرناک ٹرینڈ ہے۔‘‘ آشوتوش نے سوال کرتے ہوئے کہا کہ ’’کیا بی جے پی اور جیٹلی دہلی کے شیر سنگھ کو بھول گئے، جو دہلی میں اسمبلی انتخابات سے پہلے بی جے پی کی حکومت بنانے کے لیے عام آدمی پارٹی کے ایم ایل اے کو خریدتے ہوئے کیمرہ پر پکڑے گئے تھے؟‘‘

غور طلب ہے کہ کانگریس کے ۹ ممبرانِ اسمبلی کے بغاوت کے واقعہ کے بعد گورنر نے وزیر اعلیٰ ہریش راوت کو کل، یعنی ۲۸ مارچ کو اسمبلی میں اکثریت ثابت کرنے کے لیے کہا تھا، لیکن اس سے ایک دن پہلے ہی ان کی رپورٹ پر صدرِ جمہوریہ نے آج اتراکھنڈ میں صدر راج نافذ کردیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *