دہلی میں کل سے پھر شروع ہوگا طاق و جفت فارمولہ

Delhi Traffic

نئی دہلی، ۱۴ اپریل (نامہ نگار): دہلی حکومت نے کل، یعنی ۱۵ اپریل سے ۳۰ اپریل ۲۰۱۶ تک دہلی میں طاق و جفت فارمولہ کو دوبارہ نافذ کرنے کا اعلان کیا ہے۔ اس کا مقصد دہلی کی فضائی آلودگی کو کم کرنا ہے۔

اس اسکیم کے تحت طاق نمبر کی گاڑیاں طاق تاریخوں میں اور جفت نمبر کی گاڑیاں جفت تاریخوں میں ہی دہلی کی سڑکوں پر چل سکیں گی۔ اس اسکیم پر صبح ۸ بجے سے رات کے ۸ بجے تک سختی سے عمل کیا جائے گا، جب کہ اتوار کو چھوٹ رہے گی۔

طاق و جفت اسکیم سے صدرِ جمہوریہ، نائب صدر، وزیر اعظم، وزرائے کابینہ اور وی آئی پیز کو مثتثنیٰ رکھا گیا ہے۔ اس کے علاوہ خواتین کے ذریعے چلائی جا رہی گاڑیوں، ایمرجنسی گاڑیوں، سی این جی گاڑیوں اور یونیفارم میں اسکول کے بچوں کو لے جانے والی گاڑیوں کو بھی اس اسکیم سے الگ رکھا گیا ہے۔ تاہم، طاق و جفت فارمولہ کا نفاذ خود دہلی کے وزیر اعلیٰ اروِند کجریوال اور ان کی کابینی ساتھیوں پر بھی ہوگا۔

دہلی کی سڑکوں پر جو بھی اس اسکیم کی خلاف ورزی کرتا ہوا پایا جائے گا، اس پر دو ہزار روپے کا جرمانہ لگے گا۔ اس اسکیم کے نفاذ کے لیے دہلی حکومت نے ۵۰۰ سول ڈیفنس رضاکاروں کو بھی ڈیوٹی پر لگایا ہے، جو کہ مختلف ٹریفک پوائنٹس پر موجود رہیں گے۔

دہلی کے وزیر ٹرانسپورٹ گوپال رائے نے کہا ہے کہ دہلی میٹرو ریل کارپوریشن اس دوران ۲۰۰ میٹروں ٹرین چلائے گا، جو ۳۰ اپریل تک ۳،۲۴۸ چکر روزانہ لگائیں گی۔ انھوں نے یہ بھی بتایا کہ مسافروں کو ڈی ٹی سی بسوں کے علاوہ پریاورَن بس سروِس بھی مہیا ہوگی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *