’دی ممتارِٹرنس‘: عوام کے درست جذبات کی ترجمانی

tmc-bengal-celebrations

ایڈووکیٹ نازیہ الہیٰ خان نے ترنمول اور مسلمانوں کو شاندار جیت پر مبار کباد دی

کولکاتا، ۱۹ مئی (پریس ریلیز) : ماں ماٹی مانش کی شاندار جیت پر ایڈووکیٹ نازیہ الہیٰ خان نے مغربی بنگال کے عوام اور مسلمانوں کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ عوام نے اپنے فیصلہ سے تمام سیاسی موقع پرستوں کو ان کی اوقات یاد دلا دی ہے اور ممتا بنرجی کو ایک ایسا شاندار مینڈیٹ دیا ہے، جس کے ذریعہ مغربی بنگال کو ترقی کی راہ پر سرپٹ دوڑا سکتی ہیں۔

فورم فارآرٹی آئی ایکٹ کی سربراہ نے مغربی بنگال اسمبلی انتخاب میں ۲۹۴ میں سے ۲۱۲ سیٹوں پر ترنمول کانگریس کی شاندار جیت کو سیکولرازم، جمہوریت، ترقی، ممتا بنرجی کی عوام دوستی، مسلمانوں کی جیت قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ سی پی آئی ایم اور کانگریس کے ناپاک اتحاد کو عوام نے اپنے فیصلہ سے پارہ پارہ کردیا ہے اور یہ ثابت کردیا ہے کہ موقع پرستی کے تحت چند سیٹوں اور اقتدار کی ہوس میں نظریات سے سمجھوتہ کرنے والوں کو مغربی بنگال کے عوام کبھی منتخب نہیں کرسکتے ہیں۔

انتخابی نتائج کے اعلان کے بعد یہاں جاری اپنے بیان میں محترمہ خان نے کہا کہ ترنمول کانگریس بجا طور ایسی ہی جیت کی مستحق تھی۔ گزشتہ ۵ برسوں میں اس نے وہ کام کئے ہیں جو ہندستان کی کسی بھی ریاست میں نہیں ہوئے تھے۔ خصوصاً مسلمانوں اور اقلیتوں کی ترقی کے سلسلے میں ممتا بنرجی کے اقدامات نے انہیں مسلمانوں کے ووٹ کا مستحق بنا دیا تھا اور مسلمانوں نے انہیں ووٹ دے کر ان کے احسان کا جواب احسان سے دیا ہے۔ حالانکہ کچھ موقع پرستوں نے ناپاک سیاسی اتحاد کا سہارا لے کرمسلمانوں کو گمراہ کرنے کی کوشش کی تھی مگر مغربی بنگال کے مسلمانوں کی سیاسی بالغ نظری نے ان سب کو مسترد کرکے کام کرنے والوں کو منتخب کیا ہے۔

ایڈووکیٹ نازیہ الہیٰ خان نے کہا کہ بنگال کی سیاست سے واقف لوگوں کے لئے یہ قیاس لگانا تو مشکل نہیں تھا کہ کل ۲۹۴ سیٹوں پر تنہا لڑنے والی ممتا بنرجی کو کم سے کم اس بار بائیں محاذ اور کانگریس کے لئے مل کر ہرانا بھی ممکن نہیں ہو گا، لیکن کوئی کوئی یہ نہیں سوچ پایا تھا کہ ممتا کو ۲۰۱۱ کے ۱۸۴ کے مقابلہ اس ۲۰۱۶ میں ۲۱۲ سیٹیں ملیں گی۔ اس سے یہ بھی پتہ چلا ہے کہ مغربی بنگال کے لوگ کمیونسٹوں کی غلطیوں کو پانچ سال بعد بھی بھلا نہیں پائے ہیں۔

اس اتحاد کو نہ صرف یکسر مسترد کیا ہے کہ بایاں محاذ کو ۲۷ سیٹوں پر سمیٹ دیا ہے جب کہ کانگریس کے خواب کو ۴۲ سیٹوں کو سخت پتھر سے چکناچور کردیا۔ یہ دونوں پارٹیوں کی ان گناہوں کی سزا ہے جو انہوں نے عوام کے ساتھ روا رکھا تھا۔

ایڈووکیٹ نازیہ الہیٰ خان نے ممتا بنرجی اور ترنمول کانگریس کے تمام ۲۱۲ نو منتخب ارکان اسمبلی کو مبارک باد دیتے ہوئے اس توقع کا اظہار کیا ہے کہ وہ بنگال کے عوام اور مسلمانوں کے حق میں تعمیر اور ترقی کے کام کو بلا کسی رکاوٹ کے جاری رکھیں گے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *