رحمت بانو کا جسد خاکی سمری بختیار پور روانہ

تدفین خاندانی قبرستان میں جمعہ کو ہوگی

رحمت بانو
رحمت بانو

پٹنہ(نامہ نگار):
آل انڈیا حج کمیٹی کے چیئرمین اور کھگڑیا سے لوک سبھا کے ممبر چودھری محبوب علی قیصر کی والدہ رحمت بانو کاجسد خاکی جمعرات کی شام کو پاٹلی پترا سے سمری بختیارپور کے لیے روانہ ہوگیا۔ ان کی نماز جنازہ یہاں پاٹلی پترا کالونی میں واقع مرحومہ کے گھر ’بختیارپورہاؤس‘ کے لان میں عصر کے بعد ہوئی۔ جنازہ کی نماز اورینٹل کالج پٹنہ کے شعبۂ اردو کے صدر پروفیسر شکیل احمد قاسمی نے پڑھائی۔ واضح ہوکہ رحمت بانونے آج صبح چھ بجے کے قریب آخری سانس لی ۔ وہ ۸۱؍ برس کی تھیں۔ ان کے پسماندگان میں دوبیٹے چودھری فاروق صلاح الدین اور چودھری محبوب علی قیصر اور ایک بیٹی ہیں۔محترمہ بانو کے انتقال سے پٹنہ کے ساتھ ساتھ سمری بختیارپور میں ماحول سوگوار ہے۔ مرحومہ بڑی دیندار اور نیک سیرت تھیں۔وہ غریبوں اور ضرورتمندوں کی ہرممکن مدد کیا کرتی تھیں۔ وہ ہ پاٹلی پترا میں اپنے گھر پر ہفتہ وار دینی مجلس کا اہتمام کرتی تھیں اور جب سمری بختیارپور جاتیں تو وہاں بھی دینی مجلسوں کا اہتمام کرتیں۔ ان کے بارے میں لچھمنیاں کے وجیہہ الدین تصور نے اپنی فیس بک پوسٹ میں لکھا ہے کہ مرحومہ مالدار گھرانے میں پلنے بڑھنے اور نواب خاندان کی بہو ہونے کے باوجود بہت ہی منکسرالمزاج تھیں۔ گھمنڈ اور تکبر سے ان کا دور دور تک کوئی واسطہ نہیں تھا۔مرحومہ کی تعزیت کرنے بختیارپور ہاؤس پہنچنے والے اکثر لوگوں کی زبان پر مرحومہ کی دینی وسماجی خدمات کا ذکر تھا۔ سبھی انہیں نیک اور دیندار خاتون کے طور پر یاد کرتے نظر آئے۔ مرحومہ کی تدفین جمعہ کو چودھری خاندان کے آبائی قبرستان میں عمل میں آئے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *