سرینگر میں میں اردو ادب پر ایک روزہ سمینار ۱۵؍ جولائی کو

سرینگر: جموں و کشمیر میں 15جولائی کویہاں ڈلگیٹ میں واقع ہوٹل شہنشاہ پیلس میں’’اکیسویں صدی میں اردو ادب‘‘ کے عنوان سے ایک روزہ سمینار ہوگا۔اس میں جموں و کشمیر کی تمام نامی گرامی یونیورسٹیوں کے علاوہ بیرون ریاست کے چند اہم تعلیمی اداروں دہلی یونیورسٹی،جواہر لال نہرو یونیورسٹی،پنجابی یونیورسٹی پٹیالہ،ساگر یونیورسٹی (ایم پی)،مولانا آزاد نیشنل اردو یونیورسٹی(حیدر آباد) ،برکت اللہ یونیورسٹی ،بھوپال(ایم پی)،دیوی اہلیہ یونیورسٹی (ایم پی)وغیرہ کے ریسرچ اسکالرس اپنے مقالات پڑھنے آئیں گے۔ علاوہ ازیں جموں،دہلی،بہار،یوپی،چھتیس گڑھ ،ہریانہ وغیرہ کے بعض اہم قلم کاروں اور اساتذہ کی بھی سمینار میں شرکت متوقع ہے۔
غلام نبی کمار

اس سمینارکا انعقادوادی کے ایک غیر سرکاری ادارے’’شیخ العالم ایجوکیشنل اینڈ ویلفیئر سوسائٹی کے زیراہتمام ہورہا ہے جس کے کنوینر غلام نبی کمار ہیں۔ یہ سمینار جموں اینڈ کشمیر بینک،قادری ادبی فاؤنڈیشن دہلی‘‘اور’’ہمالین ایجوکیشن مشن راجوری‘‘ کے جزوی تعاون سے منعقد کیا جائے گا۔واضح رہے جموں و کشمیر میں یہ اپنی نوعیت کا پہلا سمینار ہوگا جس میں مختلف ریاستوں سے بیک وقت کئی معزز شخصیتیں تشریف لارہی ہیں۔سمینار کے موضوع سے بھی واضح ہورہا ہے کہ مختلف اصناف پر مقالات پڑھوائے جائیں گے جس میں کشمیر کے ادبا کے ساتھ ساتھ بیرون ریاست کے نمائندہ اور ممتاز ادیبوں کی خدمات کا بھی اعتراف کیا جائے گا۔سمینار میں دو سیشن رکھے گئے ہیں،پہلے سیشن میں دس اور دوسرے سیشن میں دس مقالہ نگارحضرات پیپر پڑھیں گے۔سمینارمیں ڈاکٹر ریاض توحیدی اور سمیہ بشیر کی کتابوں کا اجرا بھی متوقع ہے۔

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *