عام بجٹ: 1500کثیر رُخی تربیتی اداروں کے قیام کی تجویز

وزیر خزانہ ارون جیٹلی پارلیمنٹ جاتے ہوئے
وزیر خزانہ ارون جیٹلی پارلیمنٹ جاتے ہوئے

نئی دہلی، 29فروری:حکومت نے پورے ملک میں 1500 کثیر رُخی ہنرمندی کے تربیتی اداروں کے قیام کا فیصلہ کیا ہے،جس کیلئے بجٹ 17-2016 میں 17000 کروڑ روپے علیحدہ مختص کئے گئے ہیں۔مرکزی وزیر خزانہ جناب ارون جیٹلی نے آج پارلیمنٹ میں عام بجٹ 17-2016 پیش کرتے ہوئے کہا کہ حکومت کی یہ کوشش ہے کہ وہ پردھان منتری کوشل وکاس یوجنا کے ذریعے صنعت کاری کو نوجوانوں کی دہلیز پر پہنچاسکے۔
وزیر خزانہ جناب ارون جیٹلی نے کہا کہ اسکل انڈیا مشن کا مقصد آبادی کے فوائد حاصل کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس کے آغاز سے نیشنل اسکل ڈیولپمنٹ مشن نے تربیت فراہم کرنے کا ایک مناسب ماحول تیار کیا ہے اور 76 لاکھ نوجوانوں کو تربیت دینے کا ایک ماحول تیار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے صنعت اور تعلیمی اداروں کے ساتھ ساجھیداری میں ہنر مندی کے فروغ کا سرٹیفکٹ دینے کیلئے ایک نیشنل بورڈ قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے پردھان منتری کوشل وکاس یوجنا کے تحت اگلے تین برسوں کے دوران ایک کروڑ نوجوانوں کی تربیت کا منصوبہ بنایا ہے۔
وزیر خزانہ جناب ارون جیٹلی نے کہا کہ وسیع اوپن آن لائن کورسوں کے ذریعے 2200 کالجوں، 300 اسکولوں، 500 سرکاری آئی ٹی آئی اور 50 پیشہ ورانہ مراکزوں میں صنعت کاری، تعلیم اور تربیت فراہم کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ خواہش مند صنعت کار خاص طور پر ملک کے دور دراز کے علاقوں کے صنعتکاروں کو سرپرستوں اور قرض کی مارکیٹ سے جوڑا جائے گا۔
ایک اور اہم اعلان کرتے ہوئے جناب جیٹلی نے کہا کہ منظم سیکٹر میں نئے روزگار پیدا کرنے کیلئے مراعات کی خاطر حکومت ہند تمام نئے ملازمین کیلئے، جو ای پی ایف او میں اندراج کراتے ہیں، ان کی ملازمت کے پہلے تین سال کیلئے پنشن اسکیم میں 8.33 فیصد کا تعاون کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ یہ اسکیم 15000 روپے ماہانہ تک کی تنخواہ پانے والوں پر نافذ ہوگی اور اس کیلئے بجٹ میں 1000 کروڑ روپے مختص کئے گئے ہیں۔
اس کے علاوہ مالی بل2016 میں انکم ٹیکس قانون کی دفعہ 80-جے جے اے اے کے تحت دستیاب مراعات میں روزگار پیدا کرنے کیلئے نرمی کرنے کی بھی تجویز ہے۔
ایک نیشنل کیریئر سروس کاآغاز جولائی 2015 میں کیا گیا تھا، اس پلیٹ فارم پر0 35 کروڑ ملازمت کے خواہشمند افراد نے رجسٹریشن کرایا ہے۔ نئے بجٹ میں 100 ماڈل کیرئیر سینٹر قائم کرنے کی تجویز پیش کی ہے جو 17-2016 کے آخر تک کام کرنا شروع کردیں گے۔ اس میں ریاستوں کے ایمپلائمنٹ ایکسچینج کونیشنل کیریئرسروس پلیٹ فارم سے مربوط کرنے کی بھی تجویز ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *