لتا حیاؔ کی نئی کتاب کا پاکستانی شاعر کے ہاتھوں اجراء

ڈاکٹر محمد راغب دیشمکھ
ادب ،زبان اور تہذیب کی کوئی سرحد نہیں ہوتی، ہندوستان کی ہندی زبان میں چھپی کتاب کی پاکستان کے اردو شاعر کے ہاتھوں رونمائی اس بات کی مثال ہے۔ بر صغیر کی عالمی شہرت یا فتہ شاعرہ ، گیت کار اور سماجی کارکن محترمہ لتا حیاؔ کی نئی کتاب ’’ ماڈرن ابلا‘‘ کا ۸؍ جولائی کو النور انٹر نیشنل ٹیکساس، امریکہ میں منعقدہ عالمی مشاعرہ میں پاکستان کے مشہور شاعر پیرزادہ قاسم کے ہاتھوں اجراء عمل میں آیا۔ اس موقع پر ڈاکٹر شمسہ قریشی ، شیخ اعجاز ، لنور انٹر نیشنل امریکہ کے روح رواں نور امروہوی، منظر بھوپالی، اشفاق حسین ( کناڈا)، جمیل احسن (سوئیڈن)، خالد عرفان ( نیو یارک)، ڈاکٹر صبیحہ صباؔ ( نیو یارک)، محترمہ نیلو فر عباسی اور امریکہ میں مقیم محبان اردو کثیر تعداد میں موجود تھے۔ تمام شرکاء نے اس کتاب کی پذیرائی کی اور محترمہ لتا حیاؔ کے اس انقلابی اقدام پر انہیں مبارکباد دے کر اپنی نیک تمنّاوں کا اظہار کیا۔ محترمہ لتا حیاؔ نے مشاعرہ میں جب اس کتاب میں چھپی کچھ نظمیں سنائیں تو سامعین نے بے ساختہ کھڑے ہوکر تالیاں بجائیں اور اپنی داد و تحسین سے نوازا۔
ہندی زبان میں شائع لتا حیاؔ کی یہ نئی کتاب ’’ ماڈرن ابلا‘‘ جدید نظموں پر مشتمل ہے جس میں آج کے دور میں خواتین کے ساتھ ہورہی نا انصافیوں اور زیادتیوں کو اجاگر کیا گیا ہے۔ بہت جلد اس کتاب کو اردو زبان میں بھی شائع کیے جانے کا منصوبہ ہے۔ واضح رہے کہ لتاحیاؔ کا پہلا مجموعۂ کلام ’’ حیا‘‘ ہندی اور اردو دونوں زبانوں میں ایک ساتھ شائع ہوا، اس کے بعد دوسرا مجموعہ کلام’’ لتا سے حیا تک‘‘ اردو زبان میں منظرعام پر آچکا ہے۔
Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *