چیلنج ٹرافی پر مہسی کا قبضہ

حامد رضا
مہسی، (مشرقی چمپارن):

ضلع سطحی چیلنج ٹرافی کرکٹ ٹورنامنٹ کے فائنل میں مہسی کی ٹیم نے 53 رنوں سے میچ جیت کر چیمپئن شپ کپ پر قبضہ کر لیا. چیلنج ٹرافی ٹی-20 کرکٹ کا افتتاح 3 فروری کو شہر پنچایت کے کونسلر کے شوہر کملیشور پرساد گپتا نے کیا تھا. یہ سات روزہ ٹی-20 ٹورنامنٹ مرزاپور کے لیچی گراؤنڈ میں اختتام پذیر ہوا. اس میں كليان پور، چكيا، کیسریا اور مدھوبن سمیت قریب 10 ٹیموں نے حصہ لیا. جمعرات کو فائنل میچ میں مہسی کی ٹیم نے چوک مارکیٹ کے سامنے مقررہ 20 اووروں میں 207 رنوں کا ہدف رکھا. اس کے جواب میں چوک مارکیٹ کی ٹیم 154 رنوں پر ہی سمٹ گئی. اس طرح مہسی کی ٹیم نے چیلنج ٹرافی کرکٹ ٹورنامنٹ کے فائنل کا خطاب جیت لیا. فاتح ٹیم کو کانگریس بلاک صدر تحسین خان، ماسٹر شاہد رضا، آر جے ڈی بلاک صدر شتروهن پرساد یادو، جمعدار امتیاز خان، سابق پرمکھ امام حسن قریشی اور نعيم الحق سمیت دیگر معزز لوگوں نے ٹرافی پیش کیا.

مین آف دی میچ اور مین آف دی سیریز رہے روشن کمار کو ہیرو رینجر سائیکل کے ساتھ کپ دیا گیا. اس موقع پر ٹورنامنٹ کمیٹی کی جانب سے رضوان احمد ننھے بھائی، شہزاد احمد، لطیف الرحمان، سہراب علی، رستم علی، عبیدالرحمان، چنچل، ہیرے علی، راج بابو، پرویز، حسرت، صلاح الدین، الفاظ، اسلم علی، نظام الدین اور رياض الدين سمیت دیگر لوگوں نے ٹورنامنٹ کے انعقاد میں اپنا اہم کردار ادا کیا اور نوجوانوں کی چھپی صلاحیتوں کو اجاگر کرنے کے ساتھ ہی ان کا حوصلہ بڑھانے کا بھی کام کیا.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *