ڈاکٹر اے آر اندرے اسکول اور جونیئر کالج کا سالانہ جلسہ تقسیم انعامات

Prize Distribution Program (2)

بورلی پنچتن: کونکن کی سر سبز و شاداب وادی میں قائم عبدالرحیم اندرے انگلش اسکول و جونیئر کالج کا سالانہ تقسیم انعامات کا اجلاس اسکول کے حر جعفر آڈیٹوریم میں منعقد ہوا۔ پہلے بچوں اور بچیوں نے رنگا رنگ ثقافتی پروگرام پیش کئے جن میں سے کچھ قابل تعریف تھے تو کچھ قابل تقلید بھی۔ اجلاس میں سبھی ۱۴ شاخوں کے طلبہ و طالبات نے شرکت کی۔ پروگرام کے اختتام پر مہمانان ذی وقار نے اپنے خیالات کا اظہار بھی کیا۔

اس موقع پر ڈاکٹر عبدالرحیم اندرے نے نرسنگ کالج کھولنے کا مژدہ بھی سنایا۔ پروگرام میں شرکت کرنے سے یہ احساس ہوا کہ ڈاکٹر عبد الرحیم اندرے چمک دمک کی بجائے بنیادی معیاری تعلیم مہیا کرانے اور موجودہ دور کے تقاضے کو پورا کرنے پر زیادہ یقین کرتے ہیں اس لئے ہاسٹل سے لے کر کلاس روم تک چمک دمک سے خالی نظر آئے۔ بچوں کے تعلیمی اور ثقافتی پروگرام کو دیکھ کر اساتذہ کی محنت اور معاشرے کے تئیں ان کی ذمہ داریوں کے احساس کا اندازہ ہوتا ہے، خصوصی طور سے رائل ایجوکیشن سوسائٹی کے روح رواں ڈاکٹر اے آر اندرے اور پرنسپل فیروز خان کی محنت اوران کے خلوص نے ادارہ کو اس قابل بنایا ہے کہ Prize Distribution Programوہ اطراف کی آبادی کی تعلیمی پسمادگی کو دور کرنے میں اپنا اہم کردار ادا کرے۔

وائس پرنسپل عارف ایوب انصاری بتاتے ہیں ’’تعلیم پر توجہ کا اندازہ اسی بات سے لگائیں کہ ۱۹۸۲ میں ۲۶ بچوں سے شروع ہونے والے اس ادارہ کا ریزلٹ صد فی صد اور ڈسٹنکشن ۷۵ فیصد ہوتا ہے۔ اس انگلش اسکول کا نصاب کیمبرج پیٹرن پر آئی سی ایس ای اور آئی سی ایس بورڈ پر مشمل ہے، جس میں ۱۰۰ مارکس کا لازمی اختیاری اردو مضمون شامل ہے۔ اس ادارے سے تعلیم پائے درجنوں ڈاکٹرس انجنیئرس بنے ہیں، جو معاشرے کے لئے گرانقدر خدمات انجام دے رہے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *