کولکاتا مسکان فاﺅنڈیشن کا اردو ٹاپر طلبہ و طالبات کو شاندار استقبالیہ

کولکاتا، ۳ جون (پریس ریلیز): ۳۱ مئی کورشڑا کے کولکاتا مسکان فاﺅنڈیشن کی جانب سے ادارہ کے سرپرست جناب بلال حسن کے تعاون سے ۲۰۱۶ کے مادھیمک اور سیکنڈری امتحانات میں نمایاں نمبرو ں سے کامیابی حاصل کرنے والے شہر کے ہونہار ٹاپرس طلبہ وطا لبات کے اعزاز میں استقبالیہ تقریب کا اہتمام کیا گیا، جس کی صدارت انجمن ترقی اردو ہندکے جنرل سکریٹری قاسم علیگ نے فرمائی اور نقابت کے فرائض افتتاحی دور میں جناب افروز ثاقب نے، جبکہ صحافی مہتاب عالم نے اختتامی حصے تک بہت ہی خوش اسلوبی کے ساتھ انجام دیئے۔ سرپرست اعلیٰ بلال حسن کے علاوہ مہمانان خصوصی میں قاسم علیگ، ڈاکٹر اظہار عالم، شمس افتخاری، ابن حمید چاپدانوی، شیریں ظفر، ماسٹر ذوا لفقار احمد اورمحمد لقمان تھے۔ پروگرام کے افتتاح میں شمشیر ساحل اور محمد کلیم رفیع نے نعت نبی پیش کیا۔ تقریب کا باقاعدہ افتتاح مولانا جاوید اشرفی کی تقریر سے ہوا جنہوں نے کہا کہ مسکان فاﺅنڈیشن نے اپنی جانب سے علاقے کے بچوں کے مابین، جنہوں نے بڑی محنت اور لگن سے امتحانات میں ٹاپر س کا مقام حاصل کیا ہے، انہیں استقبالیہ دے کر اپنے نامہ اعمال میں ایک اور عظیم نیکی کا اضافہ کر لیا ہے۔ بچوں کو آئندہ بھی تعلیمی مقابلے میں دلجمعی کے ساتھ محنت کرنی ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے طلبہ و طالبات کو اعلیٰ عصری تعلیم کے ساتھ دینی تعلیم کے حصول پر بھی توجہ دینی ہوگی اور بڑوں کے اکرام و احترام کا بھر پور خیال رکھنا ہوگا۔ ابن حمید چاپدانوی نے فرمایا کہ سبھی طلبا کو اپنی اسلامی شناخت برقرار رکھتے ہوئے اعلی تعلیم کی طرف راغب ہونے کی ضرورت ہے جس طرح اس ضلع کی سریتا اگروال نے آئی۔ اے۔ ایس میں انیسواں مقام حاصل کیا ہے، اگر آپ بھی چاہیں تو یہ مقام پا سکتے ہیں۔ ہم مسکان فاﺅنڈیشن کی ان گرانقدر خدمات کی قدر کرتے ہوئے ذمہ داروں کو دلی مبارک باد دیتے ہیں۔ چیئرمین فیروز انجم نے مسکان فاﺅنڈیشن کی کار کردگی پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ یہ ادارہ پچھلے ۲ برسوں سے کامیاب طلبہ اور طا لبات کو انعامات سے نوازتا رہا ہے، ہم آئندہ بھی تعلیمی میدان میں بچوں کی حوصلہ افزائی کا یہ سلسلہ جاری رکھیں گے۔

DSCN5808

 ڈاکٹراظہار عالم (ڈبلیوبی سی ایس) نے بتایا کہ عزیزبچو ! آپ کی کامیابی ہمارے لئے باعث فخر ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ آپ اعلیٰ تعلیم کی طرف بھی اپنی توجہ مرکوز رکھیں۔ آپ کو انتظامیہ میں جگہ حاصل کرنی ہوگی، اس کے لئے آئی۔ اے۔ ایس، ڈبلیو۔ بی۔ سی۔ ایس۔ اور جیوڈی شیری کے مقابلے میں حصہ لینے کی سعی کر نی ہوگی۔ خدا آپ کو اس مقصد میں ضرور کامیابی دے گا اور آئندہ عید بعد علاقے میں ایک کریئر کاﺅنسلنگ کا اہتمام کیا جانا چاہئے۔ سر پرست بلال حسن نے کہا کہ تعلیم حاصل کرنے کی راہ میں اگر کوئی رکاوٹ حائل ہو خواہ وہ مالی پریشانیا ں ہی کیوں نہ ہوں تو کمیٹی کے لوگوں سے رابطہ کریں اراکین آپ کی ضرور مد د کریں گے۔ انہوں نے مزید کہا کہ عید بعد مسکان فاﺅنڈیشن کے سالانہ پروگرام کےلئے ۵۰ ضرورت مند کامیاب مادھیامک اور ہائر سیکندڑی طلبہ و طالبات کو فی کس دو ہزار روپے (برائے کتاب مع فیس) دیئے جائیں گے۔ اس کے علاوہ مزید تعاون بھی کیا جائے گا۔ شمس افتخاری نے مسکان فاﺅنڈیشن کی ٹیم کی بھی ستائش کی اور کہا کہ مسکان فاﺅنڈیشن کارشڑا میں تعلیمی میدان میں نمایاں کامیابی حاصل کرنے والوں کاو اس طرح استقبالیہ دینا بہت بڑا قدم ہے جس سے طلبہ و طالبات کوحوصلے ملے گا۔

ریاستی انجمن ترقی اردو کے جنرل سکریٹری نے فرمایا کہ علاقے میں بچوں کو کم سے کم امتحان کے وقت صاف ستھرا ماحول فراہم کیا جائے اور ڈھول باجے سے مطلق گریز کیا جائے، تبھی ہمارے بچے دوسرے کے مقابلے ۸۰ کے بجائے۹۶ فیصد مارکس لا سکتے ہیں۔ امسال اردو کے بچے امتحان میں گزشتہ سال کی بہ نسبت ۴، مارکس کم لائے ہیں جو قابل تشویش ہے۔ آئندہ گارجین حضرات بھی اپنے بچوں کا خیال رکھیں۔ آخر میں انہوں نے فاؤنڈیشن کی جانب سے بچوں کو استقبالیہ دینے پر مبارک باد پیش کی۔ کامیاب طلبہ و طالبات کو پھولوں کے ہار سے استقبال کیا گیا اور انہیں روح افزا، ایک ہا ر لیکس، قیمتی قلم اور مٹھائی دی گئی۔ جن طلبہ و طالبات کو انعامات سے نوازا گیا، ان کے نام یہ ہیں: فاطمہ اسکول کی ناظرین پروین (۴۹۳)، نیلوفر فیروز (۴۷۹)، ناصرین خاتون (۴۷۶)، انجمن اسکول کے انیس احمد (۵۵۷)، بلال احمد (۵۲۸) معراج احمد (۵۰۸)، ہائر سیکنڈری کی سعدیہ ثنا (۴۰۲)، آفرین عثمان (۳۹۰)، شگفتہ قریشی (۳۸۵)، صابیہ شاہین (۳۸۵)۔

پروگرام کو کامیاب بنانے میں افروز ثاقب، سرفراز احسن، نسیم پرویز،کلیم اختر وجد، محمد صادق، شمیم قیصر، پرویز انجم، انور علی منا، شرافت حسین، محمد شوکت و غیرہ نے لائق تحسین خدمات پیش کیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *