ہماچل میں بھاری آتش زنی سے ۵۰ ہیکٹیئر جنگل خاک

Himachal Fire

شملہ، یکم مئی (ایجنسیاں): ہماچل پردیش کے جنگلوں میں گزشتہ ایک ہفتہ سے تقریباً ۱۲ مقامات پر زبردست آگ لگی ہوئی ہے۔ صرف شملہ کے آس پاس کا ۵۰ ہیکٹیئر جنگل اس کی وجہ سے جل کر خاک ہو چکا ہے۔

صوبہ میں صرف اپریل ماہ میں آگ زنی کے ۲۰۰ سے زیادہ واقعات درج کیے گئے ہیں۔ بدھ کے روز سمر ہل کے سنگتی علاقے میں آگ لگ گئی، جب کہ آگ لگنے کا دوسرا واقعہ سمر ہل میں پیش آیا۔ اس کے علاوہ منگل کے روز چالونتھی کے قریب سنجولی میں لگی زبردست آگ کو بجھانے کے لیے ایک فائر بریگیڈ کو وہاں بھیجا گیا۔

اطلاعات کے مطابق، صوبائی جنگلات کا تقریباً ۲۲ فیصد حصہ، یعنی ۸۲۶۷ مربع کلومیٹر کا علاقہ آتش زنی سے متاثر ہو سکتا ہے۔ آگ لگنے کے زیادہ تر واقعات ان جنگلوں سے ہر سال آتے ہیں، جہاں پر دیودار کے درخت لگے ہوئے ہیں اور جہاں گرمی کے موسم میں ان درختوں کے چھلکے خشک ہوکر گرنے لگتے ہیں۔ درختوں کے یہ چھلکے بڑی تیزی سے آگ پکڑ لیتے ہیں۔

آج خود وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ نے ہماچل کے مختلف مقامات کا دورہ کرکے آتش زنی کے واقعات کا جائزہ لیا۔ مرکزی حکومت کی طرف سے ماہرین کی پانچ ٹیمیں بھی وہاں روانہ کی گئی ہیں، تاکہ آگ پر قابو کرنے کے طریقے ڈھونڈے جا سکیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *