میڈیا سے وابستگی طلبہ کے لیے مفید ہوگی: پروفیسر عراق رضا زیدی

شعبۂ فارسی جامعہ ملیہ اسلامیہ میں منعقدہ نشست میں’نیوزان خبرڈاٹ کام ‘کی ٹیم نے طالب علموں سے کہا کہ وہ جیسے چاہیں اپنے فائدے کے لیے اس ویب پورٹل کا استعمال کرسکتے ہیں

(نشست کے صدر پروفیسر عراق رضا زیدی کے ساتھ میں حذیفہ ارشد اور طلبہ سے مخاطب اسفر فریدی)
(نشست کے صدر پروفیسر عراق رضا زیدی کے ساتھ میں حذیفہ ارشد اور طلبہ سے مخاطب اسفر فریدی)

نئی دہلی، ۷؍اپریل(حامد رضا)آج جامعہ ملیہ اسلامیہ کے شعبۂ فارسی میں آن لائن نیوز اور میڈیا کے نئے رجحانات کے حوالے سے ایک نشست منعقد کی گئی۔ اس کی صدارت شعبۂ فارسی کے صدرپروفیسر عراق رضا زیدی نے کی جبکہ’ نیوزان خبر‘ ویب پورٹل کے ایڈیٹر اسفر فریدی اور’نیوزان خبرڈاٹ کام‘ کے ایچ آر اینڈ مارکیٹنگ ہیڈ حذیفہ ارشد بطور مہمان شریک ہوئے ۔
طالب علموں سے مخاطب ہوتے ہوئے پروفیسر عراق رضا زیدی نے کہا کہ میڈیا ایک بڑی طاقت ہے اور اس سے جڑنے کے لیے یہ سنہری موقع ہے۔ انہوں نے ’نیوزان خبر ڈاٹ کام ‘ کی ٹیم کا استقبال کرتے ہوئے کہا کہ اپنی تعلیمی سرگرمیوں کو اولویت دیتے ہوئے اگر طلبہ انٹرنیٹ میڈیا میں اپنی صلاحیتوں کو نکھارتے ہیں، تو اس سے ان کا بڑا فائدہ ہوگا۔
اس موقع پر ’نیوز ان خبرڈاٹ کام ‘ کے ایچ آر اینڈ مارکیٹنگ ہیڈ حذیفہ ارشد نے کہا کہ بیسویں صدی کی آخری دہائی میں انٹر نیٹ نے انقلاب پیدا کیا، اور پھر دیکھتے ہی دیکھتے آن لائن میڈیا کا جادو سب پر چھا گیا۔ انہوں نے کہا آن لائن میڈیا کے کئی فوائد ہیں۔ سب سے پہلا فائدہ یہ ہے کہ دنیا کے کسی کونے میں بھی اس کو پڑھا جاسکتا ہے، دوسرا یہ کہ اس کے اندر شائع خبروں اور مضامین کو زیادہ آسانی کے ساتھ محفوظ کیا جاسکتا ہے، تیسری اہم بات یہ کہ فورا ہی آپ کو خبر مل جاتی ہے اور دوسرے دن کا انتظار نہیں کرنا پڑتا ہے۔

انہوں نے ویب پورٹل ’نیوز ان خبرڈاٹ کام‘ کے حوالے سے بتایا کہ چھ ماہ کی قلیل مدت میں اس نے قار ئین کا ایک بڑا حلقہ بنا لیا ہے۔ اس ویب پورٹل کی سب سے پڑی خوبی یہ ہے
کہ خبر کو خبر کی صورت ہی میں شائع کرتا ہے اور سچائی کے ساتھ قارئین تک اپنی بات پہنچاتا ہے۔ اس کے ذریعہ کسی مخصوص نظریہ اور فکر کو تھوپنے کی کوشش نہیں کی جاتی ہے۔ اس لیے طلبہ اس سے جڑ سکتے ہیں اور فائدہ حاصل کرسکتے ہیں۔
اس موقع پر ’نیوز ان خبر ڈاٹ کام ‘ کے ایڈیٹر اسفر فریدی نے میڈیا کی اہمیت کے بارے میں بتاتے ہوئے کہا کہ ہندوستان میں گذشتہ لوک سبھا الیکشن جو لڑا گیا وہ صرف اور صرف میڈیا کے زور اور طاقت پر لڑا گیا۔ اسی بنیاد پر مرکز میں موجودہ برسر اقتدار جماعت کی جیت بھی ہوئی۔
اس کے ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ جو طلبہ میڈیا کے میدان میں آنا چاہتے ہیں یا اس کے ذریعہ اپنی صلاحیتوں کو نکھارنے کے خواہشمند ہیں، ’نیوز ان خبرڈاٹ‘ کا پلیٹ فارم ان کے لیے حاضر ہے۔ انہوں نے طالب علموں کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے کہا کہ ’نیوزان خبرڈاٹ کام‘ کا وہ جس طرح استعمال کرنا چاہیں کرسکتے ہیں۔ طلبہ چاہیں تو اسے لکھنے پڑھنے اور تحقیق و تدوین کے لیے استعمال کریں، رپورٹنگ اور ایڈیٹنگ سیکھنے کے لیے ’نیوزان خبرڈاٹ کام ‘ سے وابستہ ہوسکتے ہیں اور چاہیں تو مارکیٹنگ کے میدان میں اپنی صلاحیتوں کو نکھار سکتے ہیں۔ گویا یہ پلیٹ فارم سیکھنے سے لے کر روزگار کی فراہمی تک کا ایک وسیلہ ثاب ہوسکتا ہے۔
انہوں نے طالب علموں سے کہا کہ وہ لکھنا شروع کریں، جو کچھ لکھیں اور جیسا لکھیں، اس سے وہ گھبرائیں نہیں، ڈریں نہیں کیونکہ غلطی کے خوف کے سبب ہی کوئی نہیں لکھ پاتاہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ لکھنے میں غلطی کرنا کوئی بڑی بات نہیں ہے کیونکہ غلطی کے بعد اس کی تصحیح کی ہوجائے گی ۔اس لیے جو لکھنا شروع کریں گے تو ایک دن ان کے اندر تخلیقی صلاحیت پیدا ہوجائے گی۔اس سے ان کی چھپی ہوئی تعلیمی ، تخلیقی اور تحقیقی صلاحیتیں سامنے آئیں گی اور ذہن ودماغ کے بند دروازے کھلیں گے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ آن لازن نیوز ابھی اردو میں ہے جلد ہی یہ ہندی اور انگلش میں بھی آجائے گا اور پھر فارسی میں اس کو لائے جائے گا ، اس کے فیس بک پیج بھی ہیں جس پر تازہ خبریں آتی رہتی ہیں۔پروگرام کے صدرپروفیسر عراق رضا زیدی نے آخر میں سبھی مہمانوں کا شکریہ ادا کرنے کے ساتھ ہی ’نیوز ان خبر ڈاٹ کام‘ کی ٹیم کی حوصلہ افزائی کی اور ان کی کامیابی کے لیے اپنی نیک تمناؤں کا اظہار کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *