این ڈی ٹی وی پر پابندی آزادئ رائے پر حملہ: الیاس تمبے

ملک میں ۱۹۷۵جیسے سیاہ دور اور ایمرجنسی کا ماحول

نئی دہلی:

سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) کے قومی جنرل سکریٹری الیاس محمد تمبے نے مرکزی حکومت کے ذریعے این

الیاس تمبے
الیاس تمبے

ڈی ٹی وی پر۲۴؍گھنٹے کی پابندی لگائے جانے کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ بی جے پی کی سربراہی والی حکومت کا یہ اقدام اظہار رائے کی آزادی چھیننے کے مترادف اور غیر جمہوری ہے۔ ملک میں غیر اعلانیہ ایمرجنسی کا ماحول پیدا ہوا ہے جس سے۱۹۷۵ء کی ایمرجنسی کے ’’سیاہ دور‘‘کی یاد تازہ ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کی عوام مخالف ، جمہوریت مخالف ، فرقہ واریت اور پالیسیوں کی وجہ سے ملک تباہ کن صورتحال کی طرف بڑھ رہا ہے۔ جب سے بی جے پی حکومت اقتدار پر بیٹھی ہے، بی جے پی حکومت نے اختلاف رائے اور خیالات رکھنے والے لوگوں کی آواز کو مختلف ظالمانہ طریقوں سے دبانے کی کوشش کررہی ہے۔ مرکزی حکومت نے ملک کے قوانین کا غلط استعمال کرتے ہوئے معصوموں، اقلیتوں اور سرگرم کارکنوں پر باغی اور ملک دشمن قرار دے کر ان پر جھوٹے مقدمات درج کیا ہے۔ تیستاسیتلواڈ، ڈاکٹر ذاکر نائک ،گرین پیس اوراین ڈی ٹی وی پر کی گئی کارروائیاں وغیرہ اس کی تازہ مثالیں ہیں۔ این ڈی ٹی وی پر پابندی کے تعلق سے الیاس محمد تمبے نے کہا ہے کہ بی جے پی سمیت آر ایس ایس کی تمام ذیلی تنظیموں کے تباہ کن فرقہ وارانہ ایجنڈوں کے مخالفین کے ذہنوں اور خیالات کو ابھرنے سے روکنا ہے۔ ایس ڈی پی آئی این ڈی ٹی وی کی حمایت کرتی ہے جو بے باک اور حقائق پر مبنی صحافت کو اجاگر کررہا ہے جو آج ملک اور انسانیت کی فلاح و بہبود کے لیے بہت ضروری ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *