بہار کے چھاتاپور علاقہ میں حالات کشیدہ، ایک شخص ہلاک

سپول، ۱۳؍نومبر: (خصوصی نمائندہ)بہار اسمبلی انتخابات میں چھاتاپور حلقے سے بی جے پی کے امیدوار نیرج کمار ببلو کی جیت کے جشن کے دوران کچھ شرپسندوں کی وجہ سے ۸؍ نومبر کو جو حالات کشیدہ ہوئے تھے ، وہ جمعہ کے روز اس وقت اور سنگین ہوگئے جب بشن پوربلوا گاؤں کے جمال الدین نامی ایک شخص کی پراسرار حالت میں موت ہوگئی۔

موقعۂ واردات پر پہنچے پولس کے اعلیٰ اہلکار
موقعۂ واردات پر پہنچے پولس کے اعلیٰ اہلکار

اطلاع کے مطابق ۸؍ نومبر کو نیرج کمار ببلو کے چند ایک حامیوں نے ان کی جیت کا جشن منانے کے دوران بشن پور بلوا گاؤں کی ایک مسجد کے احاطے میں پٹاخے داغے تھے۔ انہیں اس نازیبا حرکت سے باز رہنے کے لیے مقامی لوگوں نے منع کیا لیکن وہ نہیں مانے اور الٹے گاؤں والوں سے الجھ پڑے۔ بات ہاتھا پائی اور پتھراؤ تک پہنچ گئی۔ اس میں کئی لوگوں کو چوٹیں بھی آئیں۔

اس سلسلے میں مقامی تھانہ میں ایف آئی آر درج کروائی گئی جس میں ۱۰ ؍ افراد کو نامزد کیا گیا تھا۔ پولس نے ان میں سے ایک کو گرفتار بھی کرلیا ہے۔ اس کے بعد سے تھانہ میں معاملہ درج کرنے والے جمال الدین اور حشم الدین کو دھمکیاں مل رہی تھیں۔ اس دوران آج صبح جمال الدین کی لاش سڑک کے کنارے پڑی ملی۔

بتایا جاتا ہے کہ کچھ نامعلوم افراد گذشتہ راتجمال الدین کے گھر میں گھسے اور وہاں سے اٹھاکر باہر لے گئے جہاں گلاگھونٹ کر انہیں ہلاک کردیا گیا۔اس سانحے کے بعد علاقے کے حالات اور بھی زیادہ کشیدہ ہوگئے۔ اس کی وجہ سے گاؤں والوں میں شدید غم وغصہ ہے۔ انہوں نے اس کے خلاف احتجاج کرتے

ہوئے سڑک جام کردی اور قاتلوں کو گرفتار کرنے کا مطالبہ کیا۔ حالات کو قابو میں کرنے کے لیے ڈی آئی جی ناگیندر پرساد سنگھ اور سپول ضلع کے کمشنر ایس پی کم موقعۂ واردات پر پہنچے۔ اس کے ساتھ ہی کئی تھانوں کی پولس بھی بلا لی گئی۔ خبر لکھے جانے تک حالات قابو میں مگر کشیدہ تھے۔ بہار کی نئی حکومت کے لیے فرقہ وارانہ ہم آہنگی کو برقرار رکھنا ایک بڑی چنوتی ہوگی کیونکہ شکست سے بوکھلائے کچھ فرقہ پرست عناصر ماحول کو بگاڑنے کی کوشش کرسکتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *