کٹیہار صدر اسپتال میں نہیں ہے ڈینگوکے علاج کی سہولت

dengu
تصاویر عبدالرحمن

کٹیہار، ۱۳؍نومبر: (اسدالرحمن)بہار کے کٹیہار ضلع میں ڈینگو بخار کے مرض کے علاج کی سہولت نہیں ہے۔ یہ بات اس وقت سامنے آئی جب آج صبح سویرے ڈینگو کے مرض میں مبتلا ایک شخص کویہاں کے صدر اسپتال میں علاج کرانے کے لیے لایا گیا ۔

اطلاعات کے مطابق ضلع کے بنودپور گاؤں کے رہنے والے ششی کمار کو چند دنوں پہلے تیز بخار آیا ، جس کے بعد وہ نزدیک ہی کے ایک نجی کلینک میں علاج کرانے پہنچے ۔ وہاں ڈاکٹرکی صلاح پر انہوں نے جانچ کروائی تو معلوم ہوا کہ انہیں ڈینگو بخار ہے۔

ششی کمار کی والدہ کوشلیہ دیوی نے نامہ نگار کو بتایا کہ جیسے ہی انہیں بتایا گیا کہ ان کے بیٹے کو ڈینگو ہے ، انہوں نے فوراً اسے صدر اسپتال میں داخل کرانے کا فیصلہ کرلیا، لیکن یہاں آنے پر معلوم ہوا کہ اس کے علاج کی کوئی سہولت نہیں ہے۔ڈینگو کے مریض کے لیے یہاں الگ سے کوئی وارڈ ہے اور نہ ہی اسپتال ایسے کسی مریض کو بھرتی کرتا ہے۔

 

اس کی شکایت کرتے ہوئے ششی کمار کے چچا متھلیش کمار کہتے ہیں کہ ڈاکٹروں نے انہیں علاج کے لیے بھاگلپور یا پٹنہ لے جانے کو کہا ہے۔
اس معاملے میں جب اسپتال کے ایک سینئر معالج ڈاکٹر ڈی این رائے سے پوچھا گیا تو انہوں نے اس بات پر لاعلمی کا اظہار کیا کہ آخر مریض کو الگ کیوں نہیں رکھا گیا۔ لیکن اسی کے ساتھ انہوں نے اس بات کا اعتراف کیا کہ صدر اسپتال میں ڈینگو جیسے مرض کے علاج کی کوئی سہولت نہیں ہے۔

بہار میں کٹیہار کا شمار اہم شہروں میں ہوتا ہے، اس کے باوجود یہاں کے صدر اسپتال کی یہ حالت ہے۔ اس سے ششی کمار جیسے لوگوں کی پریشانی کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *