بہار، بارش اور نیتاجی کا ڈرامہ

پٹنہ: ان دنوں بہار کے کم وبیش پندرہ اضلاع میں بھاری بارش کے سبب سیلاب جیسی صورت حال ہے۔ راجدھانی پٹنہ میں اگرچہ گزشتہ ۴۸؍ گھنٹے سے بارش نہیں ہوئی ہے، اس کے باوجود بہت سے علاقوں میں پانی اب بھی بہت زیادہ جمع ہے۔ لاکھوں افراد پانی میں پھنسے ہوئے ہیں۔ حکومت اور انتظامیہ کے ساتھ ساتھ غیرسرکاری تنظیموں کے رضاکار بھی لوگوں کو محفوظ نکالنے اور متاثرین کو راحت پہنچانے میں لگے ہوئے ہیں۔ اس دوران سیاسی رہنماؤں کا ڈرامہ بھی خوب چل رہا ہے۔ پہلے بہار کے نائب وزیر اعلیٰ سشیل کمار مودی کی تصویر سامنے آئی۔ کہا گیا کہ وہ تین دنوں سے اپنے گھر میں پھنسے ہوئے تھے۔ انہیں راحت اور بچاؤ کے کاموں میں مصروف ڈیزاسٹر مینجمنٹ کی ٹیم نے محفوظ نکالا۔ سشیل مودی کیوں پھنسے رہے تین دنوں تک، ان کی خبر کیوں نہیں لی گئی ، انہوں نے خود کو بچانے کے لیے انتظامیہ سے مطالبہ کیوں نہیں کیا، سوشل میڈیا پر اپیل کیوں نہیں جاری کی، یہ اور ایسے بہت سے سوال جواب طلب ہیں۔ خیر ، نائب وزیر اعلیٰ صاحب یکم اکتوبر کو متاثرین کا حال جاننے کے لیے باہر نکلے، اور انہوں نے افسران کو ہدایات بھی دیں۔
اب پاٹلی پترا سے بی جے پی کے ایم پی رام کرپال یادو کا ایک ویڈیو وائرل ہو رہا ہے۔جناب تین چار ٹیوب کو ملا کر بنائی گئی ایک عارضی کشتی پر سوار ہو کر سیلاب متاثرین کو بچانے کا ڈرامہ کررہےتھے۔ ان کے حامی جلدی جلدی فوٹو لینے اور ویڈیو بنانے کی بات کرتے صاف سنے جاسکتے ہیں۔ اسی دوران ایک واقعہ پیش آگیا۔ مصیبت کی اس گھڑی میں ویڈیو آپ کو ہنسائے گا بھی اور انسانیت باقی ہوگی تو رلائے گا بھی۔ نیتا جی کیا کیا کرتے ہیں ، آپ خود اس ویڈیو میں دیکھ سکتے ہیں۔

Facebook Comments
Spread the love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply