عبدالرحیم قریشی کا انتقال ملت کا عظیم خسارہ

پپرالطیف (کھگڑیا)،۱۶؍جنوری(پریس ریلیز): ابھی حضرت مولانا سید نظام الدین صاحب کی وفات کا غم کم بھی نہ ہوپایا تھاکہ ملت اسلامیہ ہند نے اپنے ایک بے باک ،مخلص، اسلامی قانون کے رمز شناس، ملکی و عدالتی معاملات کے ماہر سپوت محمد عبدالرحیم قریشی کو کھودیا ۔ان کا انتقال ملت اسلامیہ ہند کا عظیم خسارہ ہے ۔ان خیالات کا اظہار سماجی تنظیم مجلس گیارہ ستارے (انڈیا) کے سرپرست مولانا عمادالدین اصلاحی نے ایک تعزیتی جلسہ میں کیا۔
انہوں نے کہا کہ ملت اسلامیہ ہند کے عظیم سرخیل اورمسلمانان ہند کے بے باک و بے لوث ترجمان محمد عبدالرحیم قریشی کی جدائی کسی خاص فرد یا ادارہ کے لیے رنج و الم کاباعث نہیں ہے بلکہ ان کے جانے سے پوری ملت مغموم و اداس ہے۔
اس موقع پر مجلس کے نائب صدرمولانا محمد شفا ء الدین ندوی نے کہا کہ عبدالرحیم قریشی کی ذات کئی اعتبار سے مختلف الجہات شخصیت کی مالک تھی۔ آپ ماہر قانون ہونے کے ساتھ ساتھ علماء اور قانون دانوں کے درمیان معتمد اور متفق علیہ ایک مضبوط کڑی کی حیثیت رکھتے تھے۔ اللہ نے آپ کو قانونی، جمہوری علم کے ساتھ ساتھ اسلامی قانون پر جو دسترس گہرائی و گیرائی کے ساتھ عطا فرمائی تھی وہ اس سے پہلے بہت کم دیکھنے کو ملی۔وہ ملت کے قانونی ترجمان تھے ،ان کی تحریر وتقریر میں وزن ہوا کرتا تھا ، مخالفین بھی آپ کی صلاحیتوں کے قائل تھے ،مجلس تعمیر ملت کے وہ سربراہ بھی تھے اور انہوں نے بے شمار کام انجام دئے۔
گیارہ ستارے انڈیا کے جنرل سکریٹری مولانا محمد وقار الدین لطیفی نے کہا کہ قریشی صاحب ہر مکتبۂ فکر وخیال کے درمیان مقبول تھے ،آپ مطالعہ کے دھنی تھے، معلومات کو حافظہ میں محفوظ رکھنے کی جو صلاحیت غیب سے آپ کو حاصل تھی وہ بہت کم لوگوں کے حصہ میں آئی۔ رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی ذات سے حددرجہ عشق و جاں نثاری، عشق رسول ؐ، مدح صحابہؓ اور یاد الٰہی سے سرشار ہمہ وقت ملت کی فکر، اس کی آبرو کی سلامتی کی خاطر تگ و دو قابل رشک رہی، ان کے اس عزم و حوصلہ نے کبھی ان کی بیماری و اعذاری کو حائل نہ ہونے دیا، نہ تھکنے والا جذبہ، جہد مسلسل،حلم و بردباری، قوم و ملت کی فلاح کی فکر اور تڑپ، اخلاص، جذبۂ ایثار اورعمل پیہم کے ساتھ جس کام میں لگ جاتے بھوک پیاس، سونا اور آرام کرنا سب حرام تھا صرف بروقت نمازوں کی ادائیگی کے لئے وقفہ ہوتا پھر لگے رہتے۔ انہیں سب حسین خوبیوں کے سنگم کے مجموعہ کا نام محمد عبدالرحیم قریشی تھا۔ رب کریم ان کی مغفرت فرمائے اور ان کے درجات کو بلند فرمائے۔آمین!

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *