دیوبنداسلامک اکیڈمی میں”فضلائےمدارس کودرپیش چیلینجز”پرمحاضرہ کاانعقاد

دیوبند،۲١جنوری ۲۰١۹: (نمائندہ)
دیوبند کےمعروف فکری و تحقیقی ادارہ دیوبند اسلامک اکیڈمی اینڈ ریسرچ سینٹر میں گزشتہ کل ملک کے سینئر صحافی اور وژن انٹرنیشنل اسکول سہرسہ کے بانی وڈائریکٹر شاہنوازبدرقاسمی نے فضلائے مدارس کو درپیش چیلینجز کے عنوان پر لیکچر دیا
شاہنواز بدر قاسمی نے اکیڈمی میں موجود طلباء سے خطاب کرتے ہوئے بتایا کہ فضلاء مدارس نے اگرچہ ہر میدان میں جد و جہد کے نتیجہ میں اپنا سکہ جمایا ہے لیکن اب بھی 70 فیصد فضلاء ایسے ہیں جو صحیح وقت میں درست رہنمائی ناملنے کی وجہ سے کنفیوژن کا شکار ہوجاتے ہیں اور ان کی صلاحیتیں ضائع ہوجاتے ہیں
انہوں نے بتایا کہ عملی میدان میں فضلاء کو سب سے پہلے اپنی معتبریت ثابت کرنے کا چیلینج پیش آتا ہے
جس کے لئے فارغین مدارس کو چاہئے کہ وہ تین باتوں کا خصوصی خیال رکھیں
ایک تو وہ کنفیوژن کا شکارہرگز نا ہوں بلکہ اپنا ایک ہدف طے کریں اور اس کے حصول کے لئے حتی المقدور سعی کریں
دوسرے یہ کہ اپنا ایک رول ماڈل یا آئیڈیل شخصیت منتخب کریں اور اسی نشان زندگی طے کرکے اپنا عملی سفر شروع کریں
تیسرے یہ کہ ایمانداری،وفاداری اور قوت برداشت کی صفات اپنے اندر پیدا کریں.
مولانا قاسمی نےاپنےدوگھنٹہ کی تقریرمیں شخص سے شخصیت بننے کے مراحل تک پیش آنے والے سبھی دشواریوں کا تفصیلی ذکر کیا انہوں نے زور دیا کہ فضلائے دیوبند اپنی شاندار ماضی کو ذھن میں رکھتے ہوئے ایک تابناک مستقبل کی تعمیر اور ملک و ملت کی خوشحالی و ترقی میں اپنی جانب سے سوفیصد تعاون پیش کرنے کی کوشش کریں
بعد ازاں سوال جواب کی نشست بھی منعقد کی گئی جس میں شاہنواز بدر قاسمی نے فضلاء مدارس کے سبھی سوالوں کا خندہ پیشانی کے ساتھ تفصیلی جواب دیا
اس موقع پر دیوبند اسلامک اکیڈمی کے ڈائریکٹر مہدی حسن عینی قاسمی نے مہمان لیکچرر کا شکریہ ادا کرتے ہوئے بتایا کہ اکیڈمی میں فضلاء کو صحافت و خطابت،تقابل ادیان اور مختلف نظریات کے بارے میں تعلیم دی جاتی ہے اور متنوع مضامین پر ریسرچ بھی کرایا جاتا ہے،
نیز ان کی خوابیدہ صلاحیتوں کو پروان چڑھانے کے لئے ہر ہفتہ الگ الگ موضوع پر ماہرین کے ذریہ لیکچر یا محاضرے کا بھی نظم کیا جاتا ہے اسی کڑی میں آج ہندوستان کےمشہورصحافی و سماجی کارکن شاہنواز بدر قاسمی مذکورہ عنوان پر لیکچر دینے کے لئے مدعو کیا گیا
واضح رہے کہ اس پروگرام کو اکیڈمی کے آفیشیل پیج پر لائیو ٹیلی کاسٹ بھی کیا گیا تھا جس سے ہزاروں لوگوں نے استفادہ کیااورسراہا_

Spread the love
  • 7
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
    7
    Shares

Leave a Reply

Your email address will not be published.