ٹی ڈی ایس ادائیگی کے متنازع موضوع کی وضاحت

ٹی وی چینلوں، براڈ کاسٹروں اور اخبارات کے تعلق سے وضاحت

نئی دہلی،۸ مارچ: ٹی وی چینلوں ،براڈ کاسٹروں اور اخبارات کے ذریعہ کی جانے والی ادائیگی پر کاٹے جانے والے ٹیکس ڈی ڈکشن ایٹ سورس (ٹی ڈی ایس) کی کٹوتی کے متنازعہ مسئلے پر پیدا ہونے والی غلط فہمی کے ازالے کی غرض سے سینٹرل بورڈ آف ڈائریکٹ ٹیکسیز نے دو سرکلر جاری کئے ہیں ۔ان سرکلر کے اجرأ کا مقصد اس مسئلے کو سمجھنے میں ہونے والی غلطی کا ازالہ کرنا ہے۔

براڈ کاسٹروں یا ٹی وی چینلوں کے ذریعہ کی جانے والی ادائیگی پر کاٹے جانے والے ٹی ڈی ایس سے متعلق سرکلرنمبر 4/2016 مورخہ 29 فروری 2016 میں یہ صراحت کی گئی ہے کہ ایسی صورت میں جہاں پروگرام کا متن براڈ کاسٹر / ٹیلی کاسٹر کی دی ہوئی شرائط پر تیار کیا گیا ہو اور اس متن یعنی کنٹینٹ پروگرام کے کاپی رائٹ حقوق ٹیلی کاسٹر / براڈ کاسٹر کو منتقل کئے جاتے ہیں ،ایسے کاموں کا ٹھیکہ انکم ٹیکس ایکٹ کی دفعہ 194سی کی رو سے کام کی تعریف می آتا ہے اس لئے دفعہ 194 کی روسے ٹی ڈی ایس کی کٹوتی ماخذ پردو فیصد کے حساب سے کی جائے گی نہ کہ دفعہ 194 جے کی روسے ’’پیشہ ورانہ یا تکنیکی خدمات کے لئے کی جانے والی ادائیگی پر دس فیصد کے حساب سے ٹی ڈی ایس کی کٹوتی کی جائے۔

اشتہارات کی تشہیر اور حصول کے لئے ایڈورٹائزنگ کمپنیوں کو ٹی وی چینلوں اور پبلشنگ ہاؤسیز کے ذریعہ کی جانے والی ادائیگی پر کاٹے جانے والے ٹی ڈی ایس کے سلسلے میں سرکلر نمبر 5 /2016 مورخہ 29 فروری میں یہ صراحت کی گئی ہے کہ اشتہارات کے حصول اور تشہیر کے لئے ایڈورٹائزنگ ایجنسی کو ٹی وی چینلوں اور اخبارات کے اداروں کے ذریعہ کی جانے والی ادائیگی پر ٹی ڈی ایس نہیں کاٹا جائے گا۔ یہ صراحت اس لئے کی گئی ہے تاکہ ایسے تمام متنازعہ معاملات کو پس پشت ڈالا جاسکے جن میں یہ نہ طے ہواہوکہ آیا ادائیگیاں رعایتیں یا چھوٹ کی نوعیت کمیشن کی ہے۔

یہ دونوں سرکلر اس محکمے کی ویب سائٹ : www.incometaxindia.gov.in. پر دیکھے جاسکتے ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *