ٹی-۲۰ ورلڈ کپ میں دھونی اور کوہلی سے بڑھ کر کون؟

kohli-and-dhoni222

کرکٹ کے ماہرین ٹی-۲۰ عالمی کپ شروع ہونے سے پہلے ہی ٹیم انڈیا کو مضبوط دعویدار مان رہے ہیں. ہندوستانی ٹیم کا حالیہ مظاہرہ اس بات کی طرف اشارا بھی کرتا ہے. ٹیم انڈیا کس طرح جیت سکتی ہے ٹی-۲۰ ورلڈ کپ، اس پر ڈالتے ہیں ایک نظر:

کوہلی کا شاندار فارم: ٹیم انڈیا کے ویراٹ کوہلی جس طرح سے اپنی بلے بازی سے مخالف ٹیم گیند بازوں کی پٹائی کر رہے ہیں، اس سے واضح ہوجاتا ہے کہ کوہلی کا بلا اگر ٹی-۲۰ عالمی کپ میں چلا تو ہندوستان کے جیتنے کے امکانات بڑھ سکتے ہیں. ٹی-۲۰ ورلڈ کپ میں کوہلی نے اب تک ۱۱ میچ کی ۱۱ اننگوں میں ۱۲۶ اعشاریہ ۶۳ کی اسٹرائک ریٹ کے ساتھ ۵۰۴ رن بنائے ہیں. کوہلی کا سب سے زیادہ اسکور سال ۲۰۱۲ ٹی-۲۰ ورلڈ کپ میں پاکستان کے خلاف ۷۸ ناٹ آؤٹ رن ہے.

اس کے علاوہ ٹی-۲۰ میں اپنے کیریئر میں وراٹ کوہلی نے ۳۸ میچوں کی ۳۵ اننگوں میں ۵۲ اعشاریہ ۶۵ کی بلے بازی اوسط کے ساتھ ۱۳۶۹ رن بنائے ہیں جس میں ان کا سب سے زیادہ انفرادی اسکور ۹۰ رن ہے. کوہلی کے اس ریکارڈ کو دیکھ کر مخالف ٹیم کے گیند بازوں کے ہوش ضرور اڑ جائیں گے.

حالیہ ایشیا کپ میں بھی کوہلی نے اپنی بلے بازی کے رنگ میں کرکٹ شائقین کو رنگ دیا تھا. پاکستان کے خلاف ان کے بلے سے ۴۹ رنوں کی زبردست اننگ کھیل کر ثابت کر دیا کہ کوہلی بیٹنگ کرتے وقت جوش کے ساتھ ہوش سے بھی کام لیتے ہیں.

ایسے میں ظاہر ہے کہ مخالف ٹیم کے پاس کوہلی کو روکنے والا گیند باز نظرنہیں آتا ہے کیونکہ کوہلی کی بیٹنگ میں ابھی ایسی کوئی بھی کمی نظر نہیں آتی kohli-and-dhoni222 (1)جس کا فائدہ حریف گیند بازوں کو مل سکے.

مسٹر کول دھونی کا بے مثال ریکارڈ

کوہلی کے علاوہ مسٹر کول دھونی کے کارنامے ٹی-۲۰ ورلڈ کپ میں انتہائی غیر معمولی ہیں. دھونی کے نام ایسا ریکارڈ درج ہے جس کو توڑنے کا تصور شاید ہی کوئی مخالف ٹیم کرے۔

# جب سے ٹی-۲۰ عالمی کپ کا آغاز ہوا ہے تب سے ٹیم انڈیا کے لیے دھونی کپتانی کر رہے ہیں جو ایک ورلڈ ریکارڈ ہے. دھونی کی کپتانی میں بھارت نے پہلا ٹی-۲۰ ورلڈ کپ ۲۰۰۷ میں جیتا تھا- اس کے بعد دھونی کی کپتانی میں ٹیم ۲۰۰۹، ۲۰۱۰ اور ۲۰۱۲ میں کے ٹی-۲۰ عالمی کپ میں فائنل تک پہنچنے میں ناکام رہی تھی لیکن ۲۰۱۴ میں یہ فائنل میں پہنچی تھی البتہ سری لنکا کے ہاتھوں شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا. اب جب ۲۰۱۶ ٹی-۲۰ عالمی کپ بھارت میں ہو رہا ہے اس سے کہیں نہ کہیں یہ امید نظر آ رہی ہے کہ ہندوستان ایک بار پھر دھونی کی کپتانی میں ٹی-۲۰ کا چیمپئن بنے گا.

کپتان دھونی کا ریکارڈ  ٹی-۲۰ ورلڈ کپ میں غضب کا ہے. کپتان کے طور پر سب سے زیادہ میچ کھیلنے کا ریکارڈ بھی مسٹر کول کے نام ہے. ۲۰۰۷ سے ۲۰۱۴ تک دھونی نے ٹی-۲۰ ورلڈ کپ میں ۲۸ میچ کھیلے ہیں جس میں بھارت کو ۱۷ دفعہ جیت ملی ہے تو وہیں ۹ بار شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے اور ایک میچ ٹائی رہا. دھونی کی کپتانی میں بھارت کو ٹی-۲۰ عالمی کپ میں ۶۴ اعشاریہ ۸۱ فیصد میچ میں کامیابی ملی ہے جو شاندار ہے.

کپتان دھونی نے ٹی-۲۰ عالمی کپ میں ۲۸ میچوں کی ۲۴ اننگوں میں ۱۰ بار ناٹ آؤٹ رہتے ہوئے ۱۲۳ اعشاریہ ۲۴ کی اسٹرائک ریٹ سے ۴۴۰ رن بنائے ہیں. ٹی-۲۰ ورلڈ کپ میں سب سے زیادہ بار ناٹ آؤٹ رہنے کا ریکارڈ بھی دھونی ہی کے نام ہے.gayle16

ٹی-۲۰ ورلڈ کپ میں وکٹ کیپر کے طور پر دھونی نے کل۲۴ شکار کیے ہیں۔ اس اعتبار سے وہ چوتھے نمبر پر ہیں. پہلے نمبر پر پاکستان کے وکٹ کیپر كامران اکمل ہیں جن کے نام وکٹ کیپر کے طور پر ۳۰ شکار ہیں. اس ورلڈ کپ میں دھونی اس ریکارڈ کو بھی توڑ سکتے ہیں.

اس کے علاوہ باقی دو وکٹ کیپر نے اب کرکٹ کھیلنا چھوڑ دیا ہے جس سے دھونی وکٹ کیپر کے طور پر بھی ورلڈ ریکارڈ بنانے کے لیے تیار بیٹھے ہیں. اس کے علاوہ دھونی ٹی-۲۰ میں اب تك ۱۴ چھکے لگا چکے ہیں. کوہلی نے بھی اب تک ۱۴ چھکے جمائے ہیں، اس معاملے میں ویسٹ انڈیزکے کرس گیل سب سے آگے ہیں۔ انہوں نے ۴۹ چھکے لگائے ہیں. گیل کے نام ٹی-۲۰ ورلڈ کپ میں ۲۳ میچوں کی ۲۲ اننگوں میں ۱۴۱ اعشاریہ ۸۲ کی بلے بازی اوسط کے ساتھ ۸۰۷ رن ہیں اور اس لحاظ سے وہ دوسرے نمبر پر ہیں، پہلے نمبر پر سری لنکا کے مہیلا جے وردھنے ہیں جن کے نام ۳۱ میچوں میں کی ۳۱ اننگوں میں کل ۱۰۱۶ رن ہیں.

بشکریہ سی این ایم

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *