امریکہ کے منتخب صدر ڈونلڈ ٹرمپ

واشنگٹن(ایجنسیاں):
امریکہ کے عوام نے اپنا نیا صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو منتخب کیا ہے۔ انہوں نے اپنے قریبی حریف ڈیموکریٹک پارٹی کی ہیلری کلنٹن کو کراری شکست دی۔ اس کے ساتھ ہی ٹرمپ اور امریکی عوام نے پوری دنیا کو چونکا دیا۔صدارتی انتخاب میں ٹرمپ کو کل ۵۳۸؍الیکٹورل ووٹوں میں سے ۲۸۹؍ ووٹ ملے جبکہ ہیلری کلنٹن کو صرف ۲۱۸؍الیکٹورل ووٹوں ہی پر اکتفاکرنا پڑا۔ البتہ مجموعی طور پر محترمہ کلنٹن کو ٹرمپ سے دو لاکھ ۳۵؍ہزار زیادہ ووٹ ملے۔ اس کے باوجود وہ ہار گئیں۔ دراصل امریکہ کے صدارتی انتخابات میں ایک ریاست میں جس امیدوار کو زیادہ عام ووٹ ملتے ہیں، وہاں کے سبھی الیکٹورل ووٹ اسی کے حق میں چلے جاتے ہیں۔ ٹرمپ امریکہ کے ۲۸؍ریاستوں میں جیتے جبکہ ہیلری کلنٹن کو صرف ۱۶؍ریاستوں میں کامیابی ملی۔ اب آئندہ سال ۶؍جنوری کو امریکی کانگریس کا مشترکہ اجلاس بلایاجائے گا، اسی میں الیکٹورل کالج کی گنتی ہوگی اور پھر صدارتی انتخابات کا رسمی طور پر اعلان کیا جائے گا۔ نومنتخب صدر ۲۰؍جنوری کو حلف لیں گے۔
چودہ جون ۱۹۴۶؍کو امریکہ کے نیویارک شہر میں پیدا ہونے والے ۷۰؍سالہ ڈونلڈجان ٹرمپ پیشے سے ایک کاروباری ہیں۔ انہوں نے اس سے پہلے کبھی کوئی سیاسی عہدہ نہیں سنبھالا۔ ٹرمپ کی جیت میں ان کی شخصیت کے اس پہلو کا بھی بہت اہم رول مانا جارہا ہے۔ امریکی سیاست پر نظر رکھنے والے ماہرین کہتے ہیں کہ عوام نے ان کی باتوں پر بھروسہ کیا کیونکہ وہ ایک سیاسی لیڈر نہیں بلکہ ایک تجارت پیشہ شخص ہیں۔ ٹرمپ کے بارے میںیہ بھی کہا جارہا ہے کہ وہ ایک نڈر انسان ہیں اور اپنی بات پر قائم رہتے ہیں۔ انہوں نے بیشتر میڈیا کی مخالفت کے باوجود اخبارات میں اپنا اشتہار نہیں دیا۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے میڈیا پر بدعنوان ہونے کاالزام بھی لگایا اور کہا کہ جو بدعنوان ہیں انہیں وہ پیسہ کیوں دیں؟انہوں نے اپنے صدارتی الیکشن میں کل ۱۷۹۶؍ کروڑ روپے خرچ کیے جبکہ ہیلری کلنٹن نے ۳۴۶۰؍کروڑ روپے خرچ کیے۔امریکہ کے صدارتی الیکشن میں ۴۴؍بعد یہ پہلا موقع آیا ہے جب کم خرچ کرنے والے امیدوار کو جیت حاصل ہوئی ہے۔ ٹرمپ نے امریکی مفادات کو سب سے اوپر رکھنے کا وعدہ کیا اور اس کے لیے ہر اس طاقت سے پوری قوت کے ساتھ لڑنے کا اعلان کیا جو کسی بھی اعتبار سے امریکہ کے مفادات کو نقصان پہنچا سکتے ہیں۔
ٹرمپ نے تین شادیاں کیں اور ان کے پانچ بچے ہیں۔ ان کی تیسری بیوی کا نام میلینیا ہے ۔ اس بیوی سے ان کو ولیم نام کا ایک بیٹا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *