ٹیم بنائیں اور انٹرنیٹ سے ایسے کمائیں

نئی دہلی: دوستو، کل ہم نے بات کی تھی کہ گھر بیٹھے انٹرنیٹ سے کمائی کی جاسکتی ہے۔ اس کے ساتھ ہی ہم نے آپ سے کہا تھا کہ ٹیم بنا کر کمائی کرنا زیادہ آسان ہے۔ اب اس کو سمجھتے ہیں کہ گھر بیٹھے انٹرنیٹ سے کمانے کے لیے ٹیم بنانا کیوں ضروری ہے۔

دوستو، دنیا میں زیادہ تر کام ایسے ہیں جو ٹیم کے ساتھ ہی کیے جاسکتے ہیں۔  گھر میں اگر ایک ہی شخص پر ساری ذمہ داری ڈال دی جائے تو وہ کام کرتے کرتے تھک ہی نہیں جائے گا، بے چارہ مر بھی جائے گا۔ اس کا دوسرا نقصان یہ ہوگا کہ گھر کے دوسرے افراد کاہل اور نکمے ہوجائیں گے۔ بیٹھے بیٹھے ان کی صحت خراب ہوگی، سو الگ۔ آپ فٹبال اور کرکٹ کو ہی لے لیں۔ اس کو بھی چھوڑیں، جس ٹینس میں اکیلا کھلاڑی کھیلتا ہے اس میں بھی اس ایک کھلاڑی کے پیچھے کئی لوگوں کی ٹیم کام کرتی ہے۔

خیر، اب جلدی سے بات کر لیتے ہیں گھر بیٹھے انٹرنیٹ سے کمانے کے لیے ٹیم ورک کی۔ دوستو! انٹرنیٹ سے کمانے کے لیے اس پر ایک ساتھ کئی طرح کا کام کرنا ہوتا ہے۔ پہلا تو یہی کہ اپنی ویب سائٹ، بلاگ یا یو ٹیوب چینل کے لیے مواد تیار کرنا۔ جہاں تک تحریری مواد تیار کرنے کی بات ہے تو وہ آپ اکیلے بھی کرسکتے ہیں لیکن ویڈیو بنانے کے لیے آپ کو دوسروں سے مدد کی ضرورت ہوگی۔ ویسے ویڈیو بھی اکیلے ہی بنائی جا سکتی ہے۔ لیکن ایک آدمی اگر روزانہ ویڈیو بنانے کے لیے سوچنے کا بھی کام کرے، اس کے لیے ریسرچ بھی کرے، اس کو تیار بھی کرے، پھر ایڈٹ کرے اور تب اپ لوڈ کرے تووہ جلدی ہی تھک جائے گا۔ کیونکہ ان کاموں میں فوری طور سے کمائی شروع نہیں ہوتی ہے، اس میں تھوڑا وقت لگتا ہے۔ ایسی صورت میں اکیلا شخص جلدی ہار مان سکتا ہے۔ اب اگر ٹیم بنا کر کام کیا جائے تو ایک آدمی ویڈیو بنانے کے لیے الگ الگ سبجیکٹ کا انتخاب کرے گا۔ اس کے بارے میں سوچے گا، مطالعہ کرے گا۔ اس کے بعد وہ اس کا بنیادی خاکہ تیار کرے گا۔ دوسرا آدمی ویڈیو بنانے میں مدد کرے گا۔ تیسرا شخص اس کو ایڈٹ کرے گا اور چوتھا اس کو اپ لوڈ کرنے کے ساتھ ہی سوشل میڈیا پر اس کو شیئرکرنے جیسے کام کرے گا۔ اس طرح ٹیم بنا کر کام کرنے میں آسانی ہوگی۔ اس کا دوسرا فائدہ یہ ہوگا کہ ایک دن میں کئی ویڈیو تیار کیے جا سکتے ہیں۔ ظاہر ہے جتنا مواد اپ لوڈ کیا جائے گا، اتنا زیادہ اس یوٹیوب چینل کو دیکھے جانے کا امکان ہوگا۔

اسی طرح ویب سائٹ یا بلاگ پر ایک آدمی کام کرے گا تو وہ دن میں اوسطاً چار پانچ چھوٹا بڑا مضمون لکھ کر اپ لوڈ کرسکتا ہے۔ لیکن چار پانچ افراد کی ٹیم کے ساتھ اگر کام ہوگا تو ایک دن میں اوسطاً بیس پچیس مضامین اور وہ بھی مختلف موضوعات و مسائل پر اپ لوڈ کرنا ممکن ہوگا۔

ویب سائٹ یا بلاگ کو کامیاب بنانے کے لیے ضروری ہے کہ آپ وہاں وزٹ کرنے والے کو جلدی سے جانے نہ دیں۔ اس کے لیے ضروری ہے کہ اس پر الگ الگ قسم کے مواد کو اپ لوڈ کریں۔ آج کل زیادہ تر ویب سائٹ پر تحریری مواد کے ساتھ ساتھ ویڈیو بھی ہوتا ہے۔ گویا جس کو پڑھنا ہو وہ پڑھے، اور جس کو دیکھنا ہو وہ دیکھے۔ اس بارے میں آپ کی دلچسپی اور معلومات کے لیے ہم پھر حاضر ہوں گے، تب تک کے لیے اجازت دیں۔

Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *