اردو کے فروغ کے لیے ہر ممکن سہولت: پروفیسر ارتضیٰ کریم

رانچی میں چار روزہ تربیتی پروگرام برائے اساتذہ
DSC_7599
رانچی، ( پریس ریلیز): قومی کونسل برائے فروغ اردو زبان ملک کی ۲۸؍ریاستوں کے ۲۲۱؍ضلعوں میں ۴۵۵؍کمپیوٹر ایپلی کیشنز بزنس اکاؤنٹنگ ملٹی لنگول ڈی ٹی پی کے مراکز چلا رہی ہے ۔یہ مراکز خصوصاً اقلیتوں کو روزگار سے جوڑنے کے لیے قائم کیے گیے ہیں۔ جدید ٹکنالوجی کے اس دور میں ان مراکز کے اساتذہ کو قومی اردو کونسل وقتاً فوقتا تربیت مہیا کراتی رہتی ہے تاکہ ان مراکز کے اساتذہ بھی نئی ٹکنالوجی کے ساتھ قدم سے قدم ملاکر آگے بڑھ سکیں۔ یہ باتیں قومی کونسل کے ڈائریکٹر پروفیسر ارتضیٰ کریم نے پانچویں تربیتی پروگرام کے افتتاحی اجلاس کے موقع پر کہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ اگر ۲۵؍طلبا بھی اردو سیکھنے کے لیے تیار ہوجائیں تو قومی کونسل اردو کے فروغ کے لیے ہر طرح کی سہولتیں فراہم کرے گی۔ انہوں نے کہاکہ کونسل تو صرف سینٹر کھول سکتی ہے لیکن اس کو کامیابی کے ساتھ چلانے کی ذمہ داری آپ لوگوں کے کاندھوں پر ہے۔
پروفیسر ارتضیٰ کریم نے اپنے خطاب میں مدعو اساتذہ سے کہا کہ بیشک آپ نے دوسری زبانوں میں علم حاصل کیا ہے لیکن آپ پر یہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ اردو بھی سیکھ لیں، یہ آپ کے لیے ایک سنہری موقع ہے۔ اس وقت حکومت ہند نے اردو کے فروغ کے ساتھ ساتھ اقلیتوں کی فلاح و بہبود کے لیے کئی ضروری اقدامات کیے ہیں۔ واضح رہے کہ یہ تربیتی پروگرام ۱۴ ؍تا ۱۷؍ مارچ ۲۰۱۶ تک چانکیہ بی این آر ہوٹل میں منعقد کیا گیا ہے جس میں بہار، جھارکھنڈ اور اڈیشہ میں فی الوقت چل رہے ۱۴۵؍ مراکز کے اساتذہ کو مدعو کیا گیا ہے۔ اس سے پہلے پونے، سری نگر، گوہاٹی اور لکھنؤ میں ایسے تربیتی پروگرام منعقد کیے جاچکے ہیں۔

اس موقع پر این آئی ای ایل آئی ٹی چنڈی گڑھ کے جوائنٹ ڈائریکٹر راجیش کمار کپیلا نے تمام اساتذہ کو اپنی نیک خواہشات سے نوازا۔
افتتاحی پروگرام کے بعد تربیتی پروگرام کا آغاز ہوا جس میں این آئی ای ایل ای ٹی کی طرف سے سچن چاندھلا ، ریتو کمل اور رام شبد نے اپنی مہارت اور تجربے کو بروئے کارلاکر اساتذہ کو تربیت فراہم کی۔
آخر میں قومی اردو کونسل کے ریسرچ آفیسر اور تربیتی پروگرام کے کنوینر انتخاب احمد نے تمام اساتذہ کا شکریہ ادا کیا۔ اس تربیتی پروگرام کے افتتاحی اجلاس کو کامیاب بنانے میں قومی کونسل کے ارکان محمدقاسم، کپل اور جتیندر کمار نے بھرپور تعاون کیا۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *