غالب اکیڈمی میں آج سے ایک نیا سلسلہ شروع

نئی دہلی، ۱۱ مارچ: اپنی ادبی سرگرمیوں اور معروف ادیبوں و شاعروں کے ساتھ ہی نوآموزوں کی بھی حوصلہ افزائی کرنے کے لیے مشہور نئی دہلی کی بستی حضرت نظام الدین میں واقع غالب اکیڈمی اردو کی خدمات کرنے والوں کا رسمی طور پر اعتراف کرنے کے مقصد سے آج سے ایک نیا ادبی سلسلہ شروع کر رہی ہے۔ aqilsir
غالب اکیڈمی کے سکریٹری ڈاکٹر عقیل احمد نے ‘نیوز ان خبر’ سے خصوصی بات چیت میں کہا کہ اس کا فیصلہ اکیڈمی کے صدر پروفیسر شمیم حنفی کی صدارت میں منعقدہ میٹنگ میں گورننگ کونسل نے گذشتہ دنوں لیا تھا۔ اس کے تحت اردو زبان و ادب کے فروغ کے لیے کام کرنے والی شخصیات کی خدمات کا باضابطہ طور سے اعتراف کیا جائے گا۔
انہوں نے بتایا کہ اس سلسلے کا پہلا جلسہ ۱۱ مارچ کو شام ساڑھے چھ بجے ہوگا جس میں غالب اکیڈمی کے صدر پروفیسر شمیم حنفی معروف شاعر اور گنگا جمنی تہذیب کے علمبردار گلزار دہلوی کے علاوہ استاد شاعر وقار مانوی اور شاہد علی خاں کی اردو زبان و ادب کی خدمات پر اظہار خیال کریں گے اور ان کی خدمت میں میمنٹو اور شال پیش کریں گے۔
غالب اکیڈمی کے اس فیصلہ کا خیرمقدم کرتے ہوئے معروف شاعر احمد علی برقی اعظمی نے اکیڈمی کے صدر و سکریٹری کے ساتھ ہی گلزار دہلوی، وقار مانوی اور شاہد علی خاں کو بھی مبارکباد پیش کی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *