سچی محنت اور صحیح جذبہ کامیابی کی کنجی ہے

جے این یو میں شعبۂ عربی کے ماہانہ سمینار میں صدر شعبہ پروفیسر مجیب الرحمن کا اظہار خیال

?
نئی دہلی، ۱۶؍ مارچ (حامد رضا)آج جواہر لعل نہرو یونیورسٹی کے اسکول آف لینگویجز میں عربی مرکزکی طلبہ تنظیم ’’النادی العربی‘‘ کی طرف سے ماہانہ سمینار منعقد ہوا۔اس میں مرکز کے صدرپروفیسر مجیب الرحمن نے ’’طلبہ اور کامیابی کے امکانات‘‘ اور محمد عطاء اللہ نے ’’ عصر حاضر میں علم اور تحقیق کے میدان میں انٹرنیٹ کی افادیت ‘‘کے عنوان سے اپنے مقالے پیش کیے ۔سمینار میں مصری سفارت خانہ کے کلچرل کونسلر ڈاکٹراحمد عبدالرحمن القاضی بطور مہمان خصوصی شرکت کی جبکہ جلسہ کی صدارت اسکول آف لینگویجز کے سابق ڈین پروفیسر اسلم اصلاحی نے کی۔پروفیسر مجیب الرحمن نے اپنا مقالہ پیش کرتے ہوئے کہا کہ سچی محنت اور صحیح جذبہ کامیابی کی کنجی ہے،ایک طالب علم کے لیے سب سے ضروری بات یہ ہے کہ وہ اپنے وقت کا صحیح استعمال کرے اور اپنی زندگی کے اندرنظم و ضبط لائے،کسی بھی چیز کا حصول انسان کے بس سے باہر نہیں ہے،ضرورت اس کی ہے کہ رغبت اور چاہت موجود ہو۔ انہوں نے کہا کہ مطالعہ اور مناقشہ سے ذہن ودماغ کے بند دروازے کھلتے ہیں۔انہوں نے زبان میں مہارت کے تعلق سے کہا کہ قوت کلام اور گویائی تیز آواز میں پڑھنے اوراہل زبان کے ساتھ کلام کرنے سے آتی ہے،جہاں تک لکھنے کا سوال ہے تو جتنا زیادہ مشق ہو اتنا ہی اس کا فائدہ ہے۔
پروفیسر مجیب الرحمن نے مزید کہا کہ یونیورسٹی کے اندر پڑھنے اور سیکھنے کا خوشگوار ماحول ہوتا ہے،جہاں طلبہ اور اساتذہ دونوں آپس میں ایک دوسرے سے سیکھتے ہیں ۔صدارتی کلمات پیش کرتے ہوئے پروفیسر اسلم اصلاحی نے طلبہ کی حوصلہ افزائی کرتے ہوئے کہا کہ’ النادی العربی‘ طلبہ کی ایک فعال اورمتحرک تنظیم ہے جس نے قلیل مدت میں عربی زبان اور تہذیب کے فروغ اور وسعت کے لیے بہت سنجیدہ کوشش کی ہے۔اس کی ایک مثال طلبہ کا ماہانہ سمینار ہے جس میں درجنوں علمی اور تحقیقی مقالے پیش کیے گئے،جس سے طلبہ اور اساتذہ سبھوں نے خوب فائدہ اٹھایا ہے۔ اس موقع پر’ النادی العربی‘ کی طرف سے مرکز کے رخصت ہونے والے صدرپروفیسر مجیب الرحمن کو الوداعیہ بھی دیا گیا اور پروفیسر رضوان الرحمن کاہونے والے صدر کے طور پر استقبال کیاگیا۔اس تقریب میں کثیر تعداد میں اساتذہ ،طلبہ اور ریسرچ اسکالروں نے شرکت کی ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *