انسانیت کی مشعل کو ہم منزل تک پہنچائیں گے: خاتون شنکراچاریہ

MKSD PHOTO

لکھنؤ، ۲۷ مارچ (پریس ریلیز): انسانیت کی خدمت کرکے ہم بدعنوانی اور ذات پات کے نظام کی دیوار کو توڑنے کے عظیم کام کو قیادت دے کر سنہرے بھارت کی تعمیر کریں گے۔ یہ بات خاتون شنکراچاریہ سرسوتی جی مہاراج نے آج اپنے اعزازی پر وگرام سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔

ملک کی خاتون اول شنکراچاریہ سرسوتی جی مہاراج ترکال بھونتا آج لکھنؤ واقع مانو کلیان سیوا دھرم آشرم پہنچیں جہاں گلدستوں سے ان کا خیر مقدم کیا گیا۔ اس موقع پر اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے سرسوتی جی مہاراج نے کہا کہ ہم بھارت کے لوگ بھوکے کو کھانا، پیاسے کو پانی، ننگے بدن کو کپڑے، بیمار کو دوا، ناخواندہ کو تعلیم، انصاف و کمزور کو تحفظ دلائیں گے۔ انھوں نے ۱۱ ستمبر ۲۰۱۶ کو لکھنؤ میں منعقد ہونے جا رہی عالمی مذہب پارلیمنٹ کو اپنا مکمل تعاون دینے کا بھی اعلان کیا۔

انھوں نے مانو کلیان سیوا دھرم کی طرف سے انسانیت کے پیغام کو پوری دنیا تک پہنچانے اور اجین میں ۲۲ اپریل ۲۰۱۶ سے منعقد ہونے والے کمبھ میں انسانی خادموں کو دعوت دیتے ہوئے کروڑوں لوگوں کو اس مہم سے جڑنے کی اپیل کی۔ انہوں نے مزید کہا ہے کہ انسانیت کی خدمت کرکے ہم بدعنوانی اور ذات پات کے نظام کی دیوار کو توڑنے کے عظیم کام کو قیادت دے کر سنہری بھارت کی تعمیر کریں گے۔

پروگرام میں کے پی چودھری نے لکھنؤ میں عالمی مذہب پارلیمنٹ کے انعقاد کو انسانی زندگی کا سب سے بامعنی قدم بتایا۔ تقریب میں مانو کلیان سیوا دھرم کے بانی ایم اقبال نے شنکراچاریہ جی کو مانو کلیان سیوا دھرم میموری نشان کے ساتھ مقدس آٹھ دھرموں کا فلاحی سرو دھرم نشان پیش کیا۔ اس تاریخی موقع پر دی بوددھسٹ سوسائٹی آف انڈیا کے ریاستی صدر جگ جیون پرساد، بی ڈی بھارتی روشن امبیڈکر کلب کے صدر پیسی کریل بھی موجود تھے۔ ان کے علاوہ فہیم صدیقی، نریندر سنگھ موگا ایڈیٹر پنجابی سمن، محمد آفاق، کیدار ناتھ، زبیر جونپوری، سدیپ گوتم، ناصر حسین، مکیشانند، محمد شعیب، اودھیش کمار پانڈے وغیرہ نے بھی اس پروگرام میں شرکت کی۔ پروگرام کی نظامت ایس پی راوت نے کی۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *