آئی اے ایس میں 13واں مقام لاکر ساگر کمار نے سہرسہ کا نام روشن کیا

وجیہ احمد تصور کی خصوصی رپورٹ ✍️
🌼 جن میں اکیلے چلنے کا حوصلہ ہوتا ہے 🏅
🌼 ان کے پیچھے ایک دن قافلہ  ہوتا  ہے..🏅
اس شعر کو سچ ثابت کرکے دکھا دیا ہے  کوشی کے لال ساگر کمار جھا نے. سہرسہ ضلع کے چین پور  پنچایت کے سابق مکھیا  مسٹر چندر موہن جھا عرف سوہن جھا کے پوتے اور مہیر کمار جھا عرف بھگوان  کے صاحبزادے ساگر  کمار جھا نے ایک بار پھر تاریخ دہراتے ہوئے سول سروس کے امتحان میں کل ہند سطح پر 13 واں رینک لاکر سہرسہ نام پورے ملک میں روشن کر دیا ہے.
اس سے پہلے تین بھائی بہنوں میں سب سے چھوٹے ساگر  کمار جھا یونین پبلک سروس کمیشن کے اسسٹنٹ کمانڈنٹ کی 2016 کے امتحان میں ملک بھر میں پہلا مقام حاصل کر سہرسہ ہی نہیں بہار کا نام قومی سطح پر روشن کرنے کا کام کر چکے ہیں.
ساگر کمار جھا جو   سہرسہ  کے چین  پور گاؤں میں 26 فروری 1994 کو  پیدا ہوئے . ساگر  کے والد مہیر کمار جھا جھارکھنڈ کے رانچی میں بلاک کوآپریٹو آفیسر اور ماں گھریلو خاتون  ہیں.
کٹیھار میں اسکاٹش پبلک اسکول سے ساگر کمار نے اپنی تعلیمی سفر کی شروعات  کی. دسویں دھنباد کے ڈی اے وی پبلک اسکول  سے  کی. 12 ویں ڈی پی ایس پبلک اسکول  رانچی سے کیا.
ساگر کمار نے آئی آئی ٹی وارانسی سے کمپیوٹر انجینئرنگ کی تعلیم حاصل  کیا. آئی آئی ٹی انجینئرنگ  مکمل کرنے کے بعد سیمسنگ  کمپنی کے آر اینڈ ڈی سیکشن میں بھی کام کیا. ابھی آئی اے ایس کے امتحان میں ملک بھر میں 13 واں مقام لا کر کوشی کی سرزمین کو ایک بار پھر فخر سے سر بلند  کرنے کا کام کیا ہے جس سے ضلع بھر میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے.
منزل انہی کو ملتی ہے جن کے سپنو میں جان ہوتی ہے، پنکھ سے کچھ نہیں ہوتا ہے حوصلوں سے اڑان  ہوتی ہے
Facebook Comments
Spread the love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply