ملک تنزلی کی طرف گامزن ہے: پنڈت چندیشور ٹھاکر

سہرسہ، ۲۶؍ فروری(نامہ نگار):ملک کے سماجی اور سیاسی حالات پر نظر رکھنے والے پنڈت چندیشور ٹھاکر موجودہ صورتحال سے مایوس ہیں۔ انہوں نے ’نیوز ان خبر‘ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان ایک عظیم ملک ہے ، لیکن اس کی باگ ڈور جن لوگوں کے ہاتھوں میں ہے، وہ اسے ٹھیک سے آگے نہیں بڑھا رہے ہیں۔

پنڈت چندیشور ٹھاکر لوگوں کی ذاتی زندگی سے لے کر ان کی سماجی اور سیاسی زندگی پر تبصرہ کرنے کے لیے مشہور ہیں۔ ان کی شہرت کی ایک اور وجہ یہ ہے کہ وہ بی بی سی کے نامہ نگار رہے معروف صحافی منی کانت ٹھاکر کے پڑوسی ہیں۔


چندیشور ٹھاکر نے کہا کہ ہندوستان میں ترقی کے بے شمار امکانات ہیں ، لیکن اس کے لیے مثبت سوچ کے علاوہ سماج کے سبھی طبقے اور فرقے کو بغیر کسی تفریق کے ایک ساتھ لے کر آگے بڑھنے کی ضرورت ہے۔ افسوس کی بات یہ ہے کہ موجودہ لیڈرشپ اس میں ناکام ہورہی ہے۔ انہوں نے وزیر اعظم نریندر مودی کا نام لیے بغیر کہا کہ لیڈر کو چوڑی چھاتی والا ہی نہیں بلکہ بڑا دل والا اور بڑی سوچ والا بھی ہونا چاہیے۔
انہوں نیہندوستان کے مختلف گوشوں میں لوٹ مار اور کشیدگی کا تذکرہ کرتے ہوئے کہا کہ یہ سب باتیں اتنے عظیم ملک کے مستقبل کے لیے اچھا شگون نہیں ہے۔
پنڈت چندیشور ٹھاکر نے سیاست میں پڑھے لکھے لوگوں کی کم ہوتی دلچسپی پر بھی اپنے دکھ کا اظہار کیا اور کہا کہ اس کی وجہ سے ملک کا بڑا نقصان ہورہا ہے۔ انہوں نے سیاسی رہنماؤں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’صرف نعرہ بازی اور یہاں وہاں گھومنے سے کچھ نہیں ہوگا‘ بلکہ عوام کی بھلائی کے لیے ٹھوس قدم اٹھانے ہونگے ۔انہوں نے کہا کہ جو لوگ آج یہ دعویٰ کررہے ہیں کہ ملک ترقی کررہا ہے ، وہ عوام کو دھوکہ دے رہے ہیں۔اس کے برعکس تلخ حقیقت یہ ہے کہ ہمارا عظیم ہندوستان چند ایک ناعاقبت اندیش رہنماؤں کی وجہ سے تنزلی کی طرف جارہا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *