انفوسس کے گمشدہ ملازم گنیش کا پتہ چل گیا ہے: سشما

Sushma Swaraj

نئی دہلی، ۲۴ مارچ (ایجنسی): وزیر برائے امورِ خارجہ سشما سوراج نے آج بتایا کہ پرسوں برسیلز میں ہونے والے دہشت گردانہ حملے کے بعد گم ہو جانے والے بنگلورو کے اِنفوسس ملازم راگھویندرن گنیش کا پتہ لگ گیا ہے۔

سشما سوراج نے اس بابت اپنے ایک ٹویٹ میں اطلاع دیتے ہوئے کہا کہ ’’راگھویندرن گنیش ۔ ہم نے برسیلز میں اس کی آخری کال کا پتہ لگا لیا ہے۔ وہ میٹرو ریل سے سفر کر رہا تھا۔‘‘ وزیر خارجہ نے برسیلز میں واقع ہندوستانی سفارت خانہ کے ذریعے اس سلسلے میں اٹھائے گئے فوری قدم کی بھی تعریف کی۔

سشما نے لکھا کہ ’’برسیلز میں دہشت گردانہ حملے کے بعد حالات کافی خراب ہو گئے تھے۔ میں سفیر منجیو پوری کی قیادت میں ہندوستانی سفارت خانہ کے ذریعہ کیے گئے اس شاندار کام کی تعریف کرتی ہوں۔‘‘ اس سے قبل سشما سوراج نے ایک دوسرے ٹویٹ میں کہا تھا کہ برسیلز ایئرپورٹ پر دہشت گردانہ حملے کے دوران زخمی ہونے والے جیٹ ایئرویز کے دونوں ملازمین کی صحت اب بحال ہو رہی ہے۔ ٹویٹ میں سشما نے لکھا تھا کہ ’’میں نے برسیلز میں اپنے سفیر منجیو پوری سے ابھی فون پر بات کی ہے۔ انھوں نے مجھے بتایا ہے کہ ندھی اور امت دونوں ہی اب صحت یاب ہو رہے ہیں۔‘‘

دوسری جانب اِنفوسس نے بھی اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ کمپنی برسیلز میں حملے کے بعد وہاں موجود اپنے تمام ملازمین سے رابطہ قائم کرکے یہ جاننے کی کوشش کر رہی ہے کہ وہ کہاں ہیں اور کس حالت میں ہیں۔ انفوسس کے ذریعہ جاری بیان میں کہا گیا کہ ’’ایک ملازم کو چھوڑ کر، جس سے ہم ابھی تک رابطہ نہیں بنا پائے ہیں، ہم تمام ملازمین تک رسائی حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے ہیں۔ ہم گم شدہ ملازمین کے گھر والوں سے رابطہ بنائے ہوئے ہیں اور ترجیحی طور پر برسیلز میں واقع ہندوستانی سفارت خانہ اور مقامی انتظامیہ کے ساتھ مل کر اسے ڈھونڈنے کی کوشش کر رہے ہیں۔‘‘

دریں اثنا، برسیلز حملوں کے بعد وہاں بڑے پیمانے پر قصورواروں کو تلاش کرنے کا کام جاری ہے۔ تفتیش میں پتہ چلا ہے کہ دو خودکش بمبار تو سگے بھائی تھے، جب کہ ایئرپورٹ پر دھماکہ کرنے والے بمبار کی پیرس دہشت گردانہ حملوں میں تلاش تھی۔ اس حملے میں کسی بھی ہندوستانی شہری کے ہلاک یا زخمی ہونے کی خبر ابھی تک نہیں ملی ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *