اسلامی تعلیمات انسانی جذبہ سے لبریز ہیں: مفتی مکرم

DSC_4339
نئی دہلی، ۱۸؍ مارچ (پریس ریلیز): مسجد فتحپوری دہلی مولانا مفتی محمد مکرم احمد نے آج نماز جمعہ سے قبل خطابمیں کہا کہ قرآن کریم اور احادیث رسول ﷺ میں ظلم و تشدد ، مذہبی منافرت اور دہشت گردی کے سد باب کے لیے وافر مواد موجود ہے جس سے بنی نو ع انسان کی بھر پور رہنمائی کی جارہی ہے ۔حضور ﷺ نے فرمایا کہ اگر ضرورت کی وجہ سے کسی کو اپنا ہتھیار یا نیزہ وغیرہ ساتھ لے کر چلنا پڑے تو اسے چاہیے کہ اس کی تیز دھار دار نوک کوکسی چیز سے چھپا لے تاکہ اس سے کسی کی طرف غیر ارادتاََ اشارہ بھی نہ ہو سکے ۔ انہوں نے کہا کہ قرآن کریم میں وضاحت کے ساتھ فرمایا گیا ہے کہ جس نے ناحق کسی کا قتل کیا گویا اس نے تمام انسانوں کو قتل کیا ۔لہذا صحیح معنوں میں جو لوگ مسلمان ہیں، اللہ و رسول پر ایمان رکھنے والے ہیں، ان کے لیے بھی اور جو عام انسان ہیں ان کے لیے بھی ضروری ہے کہ بلند اخلاق سے آراستہ ہوں اور بلا تفریق مذہب وملت سب کے ساتھ حسن سلوک کریں ۔

مولانا مکرم احمد نے کہا کہ تصوف درحقیقت اسلام ہی ہے ۔صوفیاء سچے مسلم تھے، رسول ﷺ اور صحابہ کرام کے بعد ان ہی کی ایسی جماعت ہے جس کو نمونہ بنا کر پیروی کرنی چاہیے۔

انہوں نے دہلی کے محکمۂ تعلیم کی غفلت اور بدانتظامی پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ آئین کی دفعہ۳۵۰اے اور دفعہ ۳۰ میں ریاستی حکومتوں کو واضح ہدایات دی گئی ہیں کہ اسکولی اور پرائمری سطح پر مادری زبان میں تعلیم دینے کا بندو بست کیا جائے ۔جو بچے آٹھویں تک اردو پڑھتے ہیں سرکاری اسکولوں میں ان کے لیے اردو اساتذہ نہیں ہیں ۔اردو میڈیم اساتذہ بھی نہیں ہیں، اردو نصابی کتابیں بھی دستیاب نہیں کرائی جارہی ہیں لہذا دہلی حکومت اور محکمۂ تعلیم کو اس طرف فوری توجہ کرنی چاہیے تاکہ اردو پڑھنے والوں کا مستقبل تاریک نہ ہو ۔
مولانا مفتی مکرم احمد نے دہلی وقف بورڈ کی تشکیل نو اور نئے سی ای او کی تقرری کا خیر مقدم کیا ۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ امانت اللہ خان چیئر مین دہلی وقف بورڈ کی سربراہی میں دہلی وقف بورڈ کا نظم ونسق بہتر ہوگا نیز غرباء ومساکین کی امداد کی طرف بھی توجہ کی جائے گی ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *