اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن مسلم دشمنی کا ایک اورشکار: اے سعید

نئی دہلی:
سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی )کے قومی صدر اے سعید نے اپنے اخباری بیان میں کہا ہے کہ این ڈی اے حکومت نے اسلامک ریسرچ فاؤنڈیشن (آئی آ ر ایف) پر پابندی عائد کرنے کا فیصلہ لیا ہے ،وہ آئینی حقوق کی ایک اور خلاف ورزی اور ملک میں مسلم تشخص پر حملہ ہے۔ ایس ڈی پی آئی کے قومی صدر اے سعید نے اس بات پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ تنظیم پرملک مخالف یا کسی بھی قسم کی فرقہ وارانہ سرگرمیوں میں ملوث ہونے کے ثبوت کے بغیر کمزور بنیادوں پر پابندی عائد کی گئی ہے۔آئی آر ایف پریواے پی اے کے تحت کارروائی کرنا اس بات کا اشارہ ہے کہ بی جے پی کی قیادت والی این ڈی اے حکومت مسلمانوں کو ڈرانے کی کوشش کررہی ہے کہ مسلمان اس ملک میں مذہب کی تبلیغ و تشہیرنہیں کرسکتے ہیں۔ آئی آرایف گذشتہ ۲۵؍سالوں سے ملک میں بین المذاہب مکالمات کے ذریعے اسلام کا پرامن تبلیغ و تشہیر کرتا آرہا ہے۔سنگھ پریوار کی طرف سے ملک میں پھیلائی جانے والی مذہبی منافرت پر روک لگانے کی بجائے بی جے پی کی قیادت والی مرکزی حکومت اسلامی نظریہ سازوں کو کچلنے کی کوشش کررہی ہے۔ بی جے پی حکومت ہندوستانی سماج میں مذہبی منافرت پھیلانے اور ووٹوں کو تقسیم کرنے کے مقصد سے اس طرح کے اقدامات اٹھارہی ہے۔یواے پی اے جیسے کالے قانون کو حکومتوں نے کسی ایک خاص طبقے کے خلاف استعمال کرنے کا آلہ بنا لیا ہے تاکہ انہیں مین اسٹریم سے الگ کردیا جائے اور ان پرپابندی عائد کرکے انہیں اذیت دی جائے۔

erahi-feature

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *