قبرستانوں کے تحفظ کے لیے جماعت اسلامی کا حکومت دہلی سے اقدام کا مطالبہ کا

photoنئی دہلی،۲؍ اپریل (پریس ریلیز) جماعت اسلامی ہند نے دہلی کی وقف جائیدادوں بالخصوص قبرستانوں کے تحفظ کے لیے حکومت دہلی کو ضروری اقدام کرنے کے لیے متوجہ کیا ہے۔ جماعت کے اسسٹنٹ سکریٹری انتظار نعیم نے وزیر اعلیٰ اروندکیجریوال کو ۳۰؍مارچ کو ایک مکتوب ارسال کرکے انہیں دہلی کی بے توجہی اور بدحالی کا شکار وقف جائیدادوں کے مسائل کی طرف متوجہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ بعض قانونی اور مالی مشکلات نیز دیگر اسباب کی بنا پر دہلی وقف بورڈ وقف جائیدادوں بالخصو ص قبرستانوں کے تحفظ کا اپنا فریضہ ٹھیک سے انجام نہیں دے پارہا ہے۔ اس صورت حال میں دہلی انتظامیہ کی قانونی اور اخلاقی ذمہ داری ہے کہ وہ غیر ضروری مقدمات وغیرہ کی بنا پر وقف جائیدادوں کے لیے پیدا شدہ مسائل کے حل اور قبرستانوں کی چہار دیواری کے لیے وقف بورڈ کا مالی تعاون کرے۔
جماعت اسلامی ہند کے اسسٹنٹ سکریٹری نے وزیر اعلیٰ دہلی کو یا دلایا ہے کہ اتر پردیش کی موجودہ حکومت نے اپنی ریاست میں قبرستانوں کی چہار دیواری تعمیر کرنے کے لیے رقم منظور کرنے کے ساتھ ہی ضرورت کے مطابق تمام اضلاع کو رقوم فراہم کرکے قبرستانوں کی چہاردیواری کی تعمیر کے احکامات جاری کیے تھے۔ واضح رہے کہ جماعت اسلامی ہند نے یوپی حکومت کو اس سلسلے میں توجہ دلائی تھی اور پھر اس کے تمام ضلعی انتظامیہ کو اپنے اپنے ضلع میں تمام قبرستانوں کی پیمائش کرکے ان کی چہار دیواری تعمیر کروانے کی طرف مسلسل متوجہ کیا تھا۔
انتظار نعیم نے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال سے یوپی حکومت کے ہی انداز میں دہلی میں قبرستانوں کی چہار دیواری کروانے اور انہیں محفوظ کرنے کے لیے مناسب فنڈ متعین کرنے کی امید ظاہر کی ہے۔ موصوف نے اس سلسلے میں نائب وزیر اعلیٰ منیش سسودیا، چیئرمین وقف بورڈ امانت اللہ خاں اور تمام مسلم ایم ایل اے صاحبان کو بھی متوجہ کیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *