بہار میں حکومت نتیش نہیں لالو چلارہے ہیں: آشوتوش جھا

پٹنہ(نامہ نگار):
بہار پردیس بی جے پی کے نوجوان لیڈر آشوتوش جھا نے کہا ہے کہ وزیر اعلیٰ نتیش کمار کی حکومت میں گذشتہ ایک سال کے دوران کوئی خاص کام نہیں ہوا ہے۔ انہوں نے ’نیوز ان خبرڈاٹ کام‘ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ عوام نے جس حساب سے مہاگٹھ بندھن کو ووٹ دیا اور انہیں اسمبلی میں دوتہائی سے زیادہ سیٹیں ملیں، اس حساب سے انہوں نے کام نہیں کیا ۔ مہاگٹھ بندھن کی حکومت اب تک

آشوتوش جھا
آشوتوش جھا

عوام کی توقعات پر کھری نہیں اتری ہے۔ آشوتوش جھا نے شراب بندی قانون کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعلیٰ نتیش کمار پورے ملک میں گھوم گھوم کر شراب بندی کا پرچار کر رہے ہیں۔ ان کا دھیان بہار پر نہیں ہے۔ بہار میں حکومت نتیش کمار نہیں لالو پرساد یادو چلارہے ہیں۔آشوتوش نے کہاکہ شراب بندی اچھی چیز ہے ، لیکن اس کے لیے جو قانون بنایا گیا ہے، وہ ٹھیک نہیں ہے۔خاص طور سے ایکگھر میں شراب ملنے پر پورے خاندان کو سزا دینے کیضابطے کو کسی بھی صورت میں درست نہیں قرار دیا جاسکتا۔انہوں نے کہا کہ شراب بندی کو نافذ کرنے کے لیے سب سے زیادہ لوگوں میں اخلاقی بیداری لانے کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کہا کہ نتیش کمار اپنی پوری توجہ صرف شراب بندی پر مرکوز کیے ہوئے ہیں۔ انہوں نے دوسرے سبھی مسائل کو نظرانداز کررکھا ہے۔ آشوتوش جھا نے کہاکہ آخر ایک شراب بندی سے تو حکومت نہیں چلتی ہے۔ دوسرے بہت سے مسائل ہیں جن کی طرف دھیان دینے کی ضرورت ہے۔ مہاگٹھ بندھن کی حکومت میں نظم وقانون کی حالت نہایت ہی خستہ ہے۔ جرائم کا گراف روزانہ بڑھتا جارہا ہے۔ روزگار کے مواقع پیدا نہیں کیے جارہے ہیں اور بدعنوانی کا جال لگاتار پھیلتا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ ریاستی حکومت کی ناکامی کی ایک بڑی وجہ یہاں کے حکمرانوں کی ہٹ دھرمی بھی ہے۔ انہوں نے کہا کہ مرکزمیں بی جے پی کی حکومت ہے ، اس سے ٹکراؤ کی وجہ سے مہاگٹھ بندھن حکومت بہار میں مرکزی منصوبوں کو نافذ نہیں کررہی ہے، جس سے ترقیاتی کام تقریباً ٹھپ ہوکر رہ گیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *