جھوٹ بول رہی ہے مرکزی حکومت: شیوانند تیواری

پٹنہ(نامہ نگار):
راجیہ سبھا کے سابق رکن شیوانند تیواری نے نوٹ بندی معاملے میں مرکزی حکومت پر جھوٹ بولنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ شادی بیاہ والے گھروں کو بینک سے ڈھائی لاکھ روپے تک نکالنے کی بات کہی گئی ہے ، لیکن ایسے لوگوں کو پیسے نہیں مل رہے ہیں۔ انہوں نے جمعہ کو یہاں ایک بیان جاری کرتے ہوئے کہا کہ مرکز کی بی جے پی حکومت نے بغیر کسی تیاری کے پانچ سو اور ہزار روپے کے کرنسی نوٹوں کو بند کرنے کا فیصلہ لے لیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کے اس فیصلے سے پورے ملک میں لوگوں کی زندگی درہم برہم ہوکر رہ گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ غریب ، کسان اور مزدور سبھی پریشان ہیں۔ دوسری جانب حکومت روزانہ روپے بدلنے اور نکالنے کے نت نئے ضابطوں کا اعلان کر رہی ہے ، لیکن عام لوگوں کی پریشانیوں میں کسی طرح کی کوئی کمی نہیں آرہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پہلہ چار اور ساڑھے چار ہزار روپے بدلنے کی اجازت تھی، لیکن اب اس میں اور بھی کمی کرتے ہوئے اسے صرف دوہزار روپے تک محدود کردیا گیا ہے۔ شیوانند تیواری نے کہا کہ جن لوگوں کو دو ہزار روپے کے نوٹ مل رہے ہیں، انہیں بازار میں خردہ کروانے میں دقت آرہی ہے، لیکن مرکزی حکومت کو اس کا احساس تک نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ جو جتنا کمزور ہے، وہ وزیراعظم نریندر مودی کے اس فیصلے سے اتنا ہی زیادہ پریشان ہے۔ شیوانند تیواری نے کہا کہ نوٹ بندی کے فیصلے کا کالا دھن رکھنے والوں سے زیادہ عام لوگوں اور
خاص طور سے غریبوں و مزدوروں پر اثر پڑ رہا ہے۔
erahi-feature

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *