مدھیہ پردیش میں سیمی کے آٹھ ارکان کو مارا گیا

پولیس کے مطابق فرار ہونے والے آٹھوں افراد سیمی کے دہشت گرد تھے، اتوار رات کو بھوپال سینٹرل جیل سے فرار ہوئے، دن میں ۱۰؍ بجے بھوپال سے قریب ۱۵؍ کلومیٹر ایٹ کھیڑی گاؤں میں مفرور قیدیوں کو دیکھا گیا، پولیس کو اس کی اطلاع دی گئی، پولیس ٹیم وہاں پہنچی، مفرور افراد نے پولیس پر فائرنگ کی، پولیس نے جوابی کارروائی کی، آٹھوں ’دہشت گرد‘ ہلاک ہوگئے

بھوپال(نامہ نگار):مدھیہ پردیش پولیس سیمی کے آٹھ مبینہ دہشت گردوں کو ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ آئی جی یوگیش چودھری نے یہاں میڈیا کو بتایا کہ بھوپال سینٹرل جیل سے فرار ہونے والے سیمی کے آٹھ ’دہشت گرد‘ ایٹ کھیڑی گاؤں میں پولیس کے ساتھ انکاؤنٹر میں مارے گئے۔ انہوں نے کہا کہ پیر کو صبح ۱۰؍ بجے کے قریب پولیس کو ’مفروردہشت گردوں‘ کی ایٹ کھیڑی گاؤں کے آس پاس موجودگی کی اطلاع ملی۔ اس اطلاع کے ملتے ہی پولیس ٹیم وہاں پہنچی۔ مفرور دہشت گردوں نے پولیس کو دیکھتے ہی اس پر فائرنگ شروع کردی۔ پولیس نے بھی جوابی کارروائی کی۔ مفرور دہشت گردوں اور پولیس کے درمیان مڈبھیڑ ہوئی۔ پولیس نے ۴۵؍راؤنڈ گولیاں چلائیں۔ اس کے بعد مخالف سمت سے فائرنگ بند ہوگئی۔ پولیس نے جائے واردات کامعائنہ کیا تو وہاں آٹھ افراد ہلاک ملے۔
مدھیہ پردیش کے آئی جی یوگیش چودھری نے بتایا کہ ’دہشت گرد‘ چادروں کی مدد سے جیل سے باہر نکلنے کے میں کامیاب ہوئے تھے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مفرور دہشت گرد جیل کے اندر الگ الگ بیرک میں قید تھے۔ انہوں نے کہا کہ جیل سے بھاگنے کے دوران ’دہشت گردوں‘ نے ہیڈ کانسٹبل راماشنکر یادو پر حملہ کردیا جس سے ان کی موت واقع ہوگئی۔ انہوں نین مزید بتایا کہ انکاؤنٹرمیں پولیس کے پانچ جوان بھی زخمی ہوئے ہیں۔ آئی جی کے مطابق جائے واردات سے تین چاقو اور تین دیسی کٹے ملے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پولیس ہرپہلو کی جانچ کررہی ہے۔ ’دہشت گردوں‘ کو باہر سے مدد ملنے کی بھی جانچ کی جارہی ہے۔ اس کے ساتھ ہی اس بات کی بھی جانچ ہورہی کہ دہشت گردوں کو ہتھیار کہاں سے ملے۔
اس دوران مدھیہ پردیش کے وزیر اعلیٰ شیوراج سنگھ چوہان نے ’دہشت گردوں‘ کو مارگرانے والی ٹیم کو مبارکباد دیتے ہوئے کہا ہے کہ ریاست کی پولیس نے فوری کارروائی کرتے ہوئے عوام کی مددسے دہشت گردوں کو مار گرایا۔ انہوں نے کہا کہ اطلاع ملتے ہی پولیس وہاں پہنچ گئی اور انکاؤنٹر میں سبھی دہشت گرد مارے گئے۔
قابل ذکر ہے کہ ایٹ کھیڑی گاؤں مدھیہ پردیش کی راجدھانی بھوپال کے قریب ہے۔اس چھوٹے سے گاؤں میں ایک پہاڑ ہے، جس پر کچھ جھونپڑیاں ہیں۔ کہاجاتا ہے کہ ان ہی جھونپڑیوں میں مفرور دہشت گردوں نے جیل سے بھاگنے کے بعد پناہ لی تھی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *