شریعت میں مداخلت برداشت نہیں…. مفتی سعید الرحمن

وجیہ احمد تصور ✍️
سہرسہ….اسلام کا قانون وہ ہے جسے اللہ نے بنایا ہے اور ہمارا ایمان اس بات پہ ہے کہ کوئی حکومت اللہ کے قانون کو بدلنا چاہے گی تو ہمارا ایمان ہے کہ خالق کائنات کے قانون میں تبدیلی تو نہیں ہو سکتی ہے انشاءاللہ وہ وہ حکومت ہی بدل جائے گی.اسلام ہمہ گیر اور آفاقی مذہب ہے، جس نےزندگی کے تمام گوشے میں ہماری رہنمائ کی ہے، اسلام کا قانون خالق کائنات کا بنایا ہوا قانون ہے،یہ مکمل اور مدلل ہے، یہ ابدی قانون ہے، مسلمان اللہ کے قانون سے مطمئن ہیں، خالق کائنات کے  قانون میں تبدیلی کو مسلمان کسی بھی قیمت میں برداشت نہیں کرسکتا ہے.
درج بالا خیالات کا اظہار   امارت شرعیہ کے  مفتی حضرت مولانا مفتی  محمد سعید الرحمن قاسمی نے سمری بختیار پور کے رانی باغ مسجد میں “دین بچاؤ دیش بچاؤ کانفرنس”  کی تیاری کے سلسلہ میں منعقدہ سب ڈویژنل سطح کے ایک   میٹنگ میں  کیا. انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کے جان پر حملہ ہوا مسلمانوں نے صبر کیا، مسلمانوں کے مال پر حملہ ہوا مسلمانوں نے صبر کیا، مسلمانوں کے عزت و آبرو پر حملہ ہوا مسلمانوں نے صبر کیا لیکن اب حملہ دین پر ہے  شریعت پر  ہے جسکو مسلمان کبھی برداشت نہیں کرسکتا  ہے. کوئی ہم سے ہمارا ایمان چھینے، کوئی ہم سے ہمارا قرآن چھینے، کوئی ہم سے ہمارا حدیث کو چھینے، کوئی ہم سے ہمارے نبی کے عشق کو چھینے تو سن لو ہم گردن تو کٹا سکتے ہیں مگر دشمنوں کے چال کو کامیاب نہیں ہونے دے سکتے ہیں.
انہوں نے حکومت کے طلاق مخالف بل کے نقصانات کو بیان کرتے ہوئے  فرمایا کہ یہ مسلمان کو بلا وجہ پریشان کرنے  ، ان سے جیل کو بھرنے،  ان کو معاشی و اقتصادی اعتبار سے کمزور کرنے،  ان کے بچوں کو جاہل رکھنے ،اور عورت کے لئے برائ کے دروازہ کو کھولنے کی سازش ہے،  ہم مسلمان اس بل کی پر زور مخالفت کرتے ہیں، اور حکومت ہند سے اس کی واپسی کا مطالبہ کرتے ہیں. ساتھ ہی انہوں نے کہا کہ اگر انصاف دینا چاہتے ہیں تو پہلے ان 32 لاکھ غیر مسلم بہنوں کو انصاف دلائیں جنکو ان کے شوہروں نے چھوڑ رکھا ہے.
اس موقع پر اپنے خطاب میں نائب قاضی امارت شرعیہ حضرت مولانا مفتی انظار عالم قاسمی نے مسلمانوں کو موجودہ صورتحال میں متحد ہو کر رہنے کی تلقین کرتے ہوئے کہا کہ جس طرح انگریزوں نے پھوٹ ڈالو اور راج کرو والی پالیسی اپنایا تھا  موجودہ دور میں بھی وہی شازشیں چل رہی ہیں اور مختلف طریقوں سے ہمیں پریشان کرنے کی کوششیں جاری ہیں جس کا مقابلہ ہمیں ڈٹ کر کرنا پڑے گا. دین بچاؤ دیش بچاؤ کانفرنس جو 15 اپریل کو گاندھی میدان پٹنہ میں منعقد ہونے جارہی ہے اس میں شرکت کی دعوت دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ  اس دن اتنی تعداد میں ہم پٹنہ پہنچیں کہ صرف گاندھی میدان ہی نہیں پورا پٹنہ بھر جائے.
“دین بچاؤ دیش بچاؤ کانفرنس ”  کی تیاری کے  سلسلہ میں منعقدہ اس  نشست  میں لوگوں نے بڑے جوش و جزبہ ایمانی کے ساتھ  شرکت کی اور اس کانفرنس کو کامیاب بنانے کے لئے تعاون کی یقین دہانی کرائی. اس پروگرام کو بامقصد بنانے کے لئے سب ڈویژن اور گاؤں سطح پر  کمیٹیان تشکیل دی گئیں.
اس میٹنگ کی صدارت مولانا محمد مظاہرالحق قاسمی اور نظامت کے فرائض حافظ محمد ضیا الدین ندوی نے انجام دیئے جبکہ اس موقع پر دین بچاؤ دیش بچاؤ کانفرنس کے سب ڈویژنل کنوینر حافظ محمد ممتاز رحمانی، راجد ضلع صدر محمد ظفر عالم، مفتی شاداب قاسمی،محمد قسیم الدین، مفتی محمد فیاض، مولانا اشتیاق احمد، جاوید اختر، سلطان احمد، کوثر امام، محمد علی جوہر، ابو حذیفہ، رفیع الزماں، حافظ محمد شکیل، محمد رضوان، مفتی نصراللہ، جاوید عالم، حافظ محمد شنجر، وصی الہدی پپو، ہارون رشید، سید غنیمت اشرف، سید منظر الحسن، ممتاز احمد، مختار عالم، سہیل احمد، زاہد علی، افسر الہدی وغیرہ  سمیت سمری بختیار پور، سلکھوا اور بنما اٹہری بلاک کے متعدد افراد بھی موجود  تھے.
Share

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *