پارسی برادری کی طرززندگی پر دہلی میں نمائش کا افتتاح

Zoroastrian Life and Culture

نئی دہلی، ۲۲ مارچ (نامہ نگار): وزارتِ اقلیتی امور اور وزارتِ ثقافت، حکومتِ ہند کے اشتراک سے آج کل دہلی میں پارسیوں کی طرزِ زندگی پر مبنی نمائش کا اہتمام کیا گیا ہے۔ یہ نمائش دہلی کے تین الگ الگ مقامات پر لگائی گئی ہیں۔ اندرا گاندھی نیشنل سینٹر فار آرٹس، نیشنل میوزیم اور گیلری آف ماڈرن آرٹ میں اس نمائش کا افتتاح گزشتہ ۱۹ مارچ کو ہو چکا ہے، جو ۲۹ مئی ۲۰۱۶ تک چلے گی۔ وزارتِ اقلیتی امور کی جانب سے یہ نمائش ’ہماری دھروہر‘ اسکیم کے تحت منعقد کی جا رہی ہے۔

انھیں میں سے ایک نمائش بعنوان ’’تسلسل کے دھاگے‘‘ کا افتتاح وزیر برائے اقلیتی امور ڈاکٹر نجمہ ہپت اللہ نے کل شام نئی دہلی کے اندرا گاندھی نیشنل سینٹر فار آرٹس میں کیا۔ اس موقع پر تقریر کرتے ہوئے نجمہ ہپت اللہ نے کہا کہ ’’یہ ایک ایسی نمائش ہے جس میں مختلف چیزیں پیش کی گئی ہیں۔ اس میں زندگی کے اس فلسفے اور اقدار کو پیش کیا گیا ہے جو کانسے کے عہد سے مسلسل آج کے جدید دور تک جاری ہیں۔ مجھے خوشی ہے کہ اس نمائش میں، جس کی تیاریوں کیلئے پارزور نے تقریبا دو دہائی تک کام کیا ہے، زرتشت اور پارسی برادری کی ایران اور ہندوستان میں طرز زندگی اور اقدار کو برابر اہمیت دی گئی ہے۔‘‘

اس موقع پر نجمہ ہپت اللہ نے سبھی کو نو روز کی مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ ’’تبدیلی اور نئے آغاز کے آج کے دن میں یہاں موجود ہر ایک کیلئے خوشحالی کی دعا کرتی ہوں۔ میں آج کے دن امید کرتی ہوں کہ یہ دن دوستی اور ہم آہنگی کے جذبے کے ساتھ منایا جائے گا اور ہر ایک کیلئے خوشیوں کا پیامبر ثابت ہوگا۔ نئے سال کے آغاز کے دن ہمیں انسانیت کی وحدت اور ہم سب کے درمیان انسانی ہمدردی کے رشتے کی اہمیت کو یاد رکھنا ہوگا۔ آج کے دن ہمیں تاریخ کے کسی اور دور سے زیادہ اتحاد کی اہمیت کو سمجھنا ہوگا اور ہر طرف رواداری اور ایک دوسرے کو قبول کرنے کے پیغام کو عام کرنے کیلئے تمام چیلنجوں اور رکاوٹوں کا مقابلہ کرنے کی خاطر ایک ساتھ کھڑا ہونا ضروری ہے۔‘‘

اس نمائش کی خاص بات یہ ہے کہ ہندوستانی تاریخ میں پہلی بار بعض فنی نمونے برٹش میوزیم، لندن سے یہاں لائے گئے ہیں۔ اسی طرح ایران سے بھی نایاب تصویریں نیشنل میوزیم میں نمائش کے طور پر رکھی گئی ہیں۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *