پھنساہا میں مدرسہ کا سنگ بنیاد اور سالانہ جلسے کا انعقاد


سہرسہ (نمائندہ ):- علم کسی خاندان ،ذات یا برادری کی اجارہ داری یا میراث نہیں ہے. اسکے لیئے تعلیم کی اہمیت کو سمجهتے ہوئے آگے بڑهنے کی کوشش کریں ،اور اپنے اندر لگن اور سچا شوق پیدا کریں – بقول مشہور سائنس داں ڈاکٹر عبد الکلام کہ  خواب وہ نہیں جو ہم نیند میں دیکهتے ہیں. بلکہ خواب وہ ہے جو ہمیں سونے نہیں دیتے ہیں.

مدرسہ کا سنگ بنیاد رکھتے پروفیسر سید قسیم اشرف

یہ باتیں دار العلوم دیوبند کے استاذ حضرت مولانا مفتی محمد نوشاد قاسمی نے سلکهوا بلاک کے تحت پهنسا ہا گاوءں کے مدرسہ اسلامیہ دارالعلوم العزیزیہ میں منعقد سالانہ اختتامی جلسہ و سنگ بنیاد کے موقع پر خطاب کرتے ہوئے کہی .
انہوں نے کہاکہ آج شا دی بیاہ یا تہوار کے موقعوں پر اگر فضول خرچیوں سے پرہیز کر لیا جائے تو بچوں کو اعلی سے اعلی تعلیم دلائ جا سکتی ہے.
حضرت مولانا مفتی سیف الرحمن ندوی نے کہاکہ تعلیم ہی وہ شئے ہے جو انسان کو ہر جگہہ عزت فراہم کرتی ہے ، تعلیم کے بغیر انسان کی زندگی نامکمل ہے – انسان کو چاہیئے کہ اپنے مستقبل کو تابناک بنانے کیلئے حصول تعلیم پر توجہہ دے – جب تک انسان تعلیم کے ساته .ساته ترقی یافتہ نہیں ہوگا .تو اسکا مستقبل سنور نہیں سکتا ہے. وہیں مدرسہ کے مدرس مولانا ثابت راہی نے تاثرات پیش کیا. پروگرام سے قبل محفل کا آغاز قاری نعمت اللہ کی تلاوت کلام پاک سے ہوا اور نعتیہ کلام قیصر رانا اور قاری لقمان نے پیش کیا. پروگرام کی صدارت الحاج سید قسیم اشرف نے کی اور نظامت حضرت مولانا مفتی سجاد قاسمی نے بحسن خوبی اپنے فرائض کو انجام دیا. وہیں مدرسہ کے طلبا و طالبات نے پہلی مرتبہ تقریری مقابلہ میں حصہ لیا.سامعینوں نے خوب داد وتحسین دی.
موقع پر مدرسہ کے صدر محمد قسیم الدین، سکریٹری الحاج علی اختر، نجم الہدی،محمد مشیر عالم، ماسٹر ماهر علی، محمد احسان عالم،محمد ضیا ء الدین، برکت علی، سیف الرحمن عرف سیپو، محمد وصی احمد، مختار عالم، محمد اشفاق عالم، محمد صبیح الدین ،ماسٹر فرقان علی، حاجی محمد عمران عالم، محمد انوار الحسن ، یحیی اعظمی اور اسکے علاوہ قرب و جوار کے کئ دانشواران حضرات شامل تهے.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *