بحریہ کی خاتون افسران نے مکمل کی پنڈاری گلیشیئر کی کوہ پیمائی مہم

indian_naval_women_team

نئی دہلی، ۵ اپریل (نامہ نگار): ہندوستانی بحریہ نے برفانی ندی پنڈاری گلیشئیرکو سرکرنے کی غرض سے اپنی خاتون افسران کی ایک ٹیم کو روانہ کیا تھا۔ ۲۴ مارچ سے ۲ اپریل ۲۰۱۶ تک جاری رہنے والی اس مہم کا مقصد بحریہ کے افسران کو کوہ پیمائی کے انتہائی جوکھم والے کھیل کود کے ہمت آزما کاموں سے مانو س کرنا تھا۔ چیف پرسونل آفیسر وی اے ڈی ایم اے آر کروے اے وی ایس ایم نے ۲۲ مارچ کو جھنڈی دکھا کر اس ٹیم کو روانہ کیا تھا۔ یہ ٹیم ۲۶ مارچ کو لوہار کھیت پہنچ گئی تھی جہاں سے اس نے ڈھپوری، کھاتی اوردوالی کے راستے سے پنڈاری گلیشئیر کی بلندیوں کو سرکرنے کی مہم شروع کی۔ یہ ٹیم ۳۰ مارچ کو ۳۳۵۳ میٹر بلند پنڈاری گلیشئیر کو سر کرنے میں کامیاب ہوئی تھی۔

اس مہم کے دوران ٹیم کو انتہائی پُر خطر اور انتہائی دشوار گزار حالات کا سامنا کرنا پڑا، جس کے دوران ٹیم کو مٹی کے تودوں اور برف کے ڈلوں کی مار برداشت کرنی پڑی،  جس کے سبب ٹیم کا سفر ازحد دشوار گزار ہوگیا۔ اس سفر کے دوران بحریہ کی خاتون افسران ٹیم نے زمین دھنسنے والے چھ خطوں کو بخیر وخوبی پار کیا۔ واضح ہوکہ کوہ پیمائی کا حقیقی راستہ ۲۰۱۳ میں اتراکھنڈ میں آئے زلزلے کے نتیجے میں تباہ ہوگیا تھا اس لئے اس ٹیم کو اپنی منزل کے لئے پنڈاری ندی کے ساتھ ساتھ کا راستہ اختیار کرنا پڑا۔ اس ٹیم نے ۳۰ مارچ کو اپنا سفر شروع کیا تھا اور ۳۱ مارچ کو لوہار کھیت پہنچنے کے بعد ۲ اپریل  کو یہ ٹیم دہلی واپس آگئی۔ اس طرح کل ملاکر تین چار دنوں کے دشوار گزار اور انتہائی پُر خطر سفر کے بعد یہ ٹیم اپنی منزل سرکرنے میں کامیاب ہوئی۔ اتراکھنڈ سرکار کے کماؤں منڈل وکاس نگم لمٹیڈ کی خدمات بھی اس مہم کے لئے حاصل کی گئیں تاکہ بنیادی اورانتظامی امداد حاصل ہوسکے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *