مودی نے عوام کے ساتھ دھوکہ کیا ہے: کانگریس

پٹنہ(نامہ نگار):
بہارپردیس کانگریس کمیٹی کے ترجمان ایچ کے ورما نے وزیر اعظم نریندر مودی پر ملک کے عوام کے ساتھ دھوکہ کرنے کا الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ انہوں نے ۲۰۱۴ء کے لوک سبھا انتخابات سے پہلے ۸۰؍ لاکھ کروڑ کا کالا دھن واپس لانے اور ہر ایک شہری کے بینک اکاؤنٹ میں ۱۵۔۱۵؍ لاکھ روپے جمع کرانے کا وعدہ کیا تھا، مگر ڈھائی سال کا عرصہ گذرجانے کے بعد بھی وہ اس کو پورا کرنے میں ناکام رہے ہیں۔ مسٹر ورما نے ’نیوز ان خبر‘ سے

ایچ کے ورما
ایچ کے ورما

خصوصی بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے پانچ سو اور ہزار روپے کے کرنسی نوٹ بند کرنے کو کالا دھن کے خاتمے کے لیے اٹھایا گیا قدم بتایا ہے۔ لیکن سچائی یہ ہے کہ ان کے اس فیصلے سے ملک کا عام شہری پریشان ہے۔ کسان ، مزدور اور کاروباری سبھی اپنا پیسہ نکالنے کے لیے تین چار دنوں تک بینک اور اے ٹی ایم پر لائن لگائے کھڑا رہتے ہیں، اس کے باوجود لوگوں کو پیسے نہیں مل رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملک کا وزیر اعظم پورے ملک کا وزیر اعظم ہوتا ہے ، کسی ایک پارٹی کا وزیر اعظم نہیں ہوتا ہے۔ لیکن بی جے پی نے اپنے لوگوں کو نوٹ بندی کے بارے میں پہلے جانکاری دے دی۔ یہی وجہ ہے کہ بہار میں بی جے پی نے کم وبیش ۲۸۔۲۹؍ضلعوں میں پارٹی دفتر کے لیے زمین خریدی ہے۔ بنگال میں بی جے پی کے لیڈر نے نوٹ بندی سے تھوڑے ہی دنوں پہلے تین کروڑ روپے جمع کروائے۔ ایچ کے ورما نے سوال کیا کہ آخر بی جے پی کے لیڈروں کو کیسے جانکاری ہوگئی تھی جو انہوں نے جلدی جلدی میں زمین کی خریداری کی۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے ۲۵؍ فیصد عوام جن میں کسان ، مزدور اور کاروباری سبھی شامل ہیں وہ ایمانداری سے کمائے گئے اپنے ہی پیسے کو بینک اور اے ٹی ایم سے نکالنے کے لیے لائن میں کھڑے رہتے ہیں اور جب ان کی باری آتی ہے تو معلوم ہوتا ہے کہ پیسہ ختم ہوگیا ہے۔ دوسری طرف وجے مالیا جس پر سرکاری بینکوں کا اربوں روپے قرض ہے، وہ ملک سے فرار ہے اور موجودہ حکومت نے اس کے قرض پر سود کی رقم کو معاف کردیاہے۔ آخر یہ کس طرح کا کالادھن لایا گیا کہ عام لوگ پریشان ہیں۔ بہار کانگریس کے ترجمان نے کہا کہ نریندر مودی نے اچھے دن لانے کا وعدہ کیا تھا، لوگوں کے تو اچھے دن نہیں آئے ، ان کے تو برے دن آگئے ، لیکن بی جے پی اور وجے مالیا جیسے اس کے ساتھیوں کے اچھے دن ضرور آگئے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *