ملک کا ایک وزیر کھلے عام گولی مارنے کی بات کرے تو یہ دیش کی بدقسمتی ہے

سہرسہ(جعفرامام قاسمی) سمری بختیارپورکے رانی باغ میں سی اےاے،این پی آر اوراین آرسی دھرنا کی مخالفت میں چل رہے مظاہرہ کے13ویں دن اے ایم یوطلبہ یونین کے موجودہ سکریٹری حذیفہ عامررشادی کی شرکت نے مظاہرین کے حوصلے کو مزید تقویت دی اور انہوں نے دھرناکوخطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج جب ہماری مائیں،بہنیں اورہمارے بے شمارنوجوان دستورہندمخالف قانون کے خلاف سینہ سپرہوکرملک کے بے شمارمقامات پرپرامن مظاہرہ کررہے ہیں انہیں اس ظالم حکومت کے ایک وزیراپنے مقام اوراپنے باوقارعہدےکی پرواہ کیے بغیرسنگھی ذہنیت کاثبوت دیتے ہوئے ان امن پسند اورمحبین وطن کے بارے میں کہ رہے ہیں کہ دیش کے غداروں کو،گولی مارے سالوں کو۔اس طرح کی زبان مودی کے ایک وزیراستعمال کر رہے ہیں اس سے بخوبی اندازہ لگایاجاسکتاہے کہ ہماراملک کس قسم کے ظالموں اورسیکولرزم کے دشمنوں کے ہاتھ میں جاچکاہے۔

انہوں نے اپناخطاب جاری رکھتے ہوئے کہاکہ جس ساورکراورگوالکرکومجاہدآزادی بتاکریہ لوگ اپنارشتہ اس سے جوڑنے کی بات کرتے ہیں تاریخ گواہ ہے کہ یہ دونوں انگریزوں کی غلامی کرتے تھے اورملک کے غدارتھے ،انہیں غداروں کی یہ اولادہے ان کی دال اب زیادہ دنوں تک گلنے والی نہیں۔ان کااب کھیل ختم ہونے والاہے۔انہوں نے رانی باغ کی ماوں اوربہنوں کوحوصلے دیتے ہوئے کہاکہ آپ کاقوت استقلال اس سیاہ قانون کی واپسی تک اسی طرح قائم رہاتوآج مودی حکومت کے لوگ مجبورہوکرہمارے شاہین باغ کی شاہینوں سے مذاکرہ کرنے کے لیے تیارہوئی ہے عنقریب اس سیاہ قانون کی واپسی کابھی اعلان کرے گی۔

وہیں آج کے دھرناسے کھگڑیاسے تشریف لائے بہوجن مکتی مورچہ کے صوبائی سکریٹری مونی کمارپاسوان،جنتانترک وکاس پارٹی کے ضلع صدرگوسائیں منڈل ،جےپرکاش مشرا،بہوجن کرانتی مورچہ کے لیڈرمحمدعاقب اورپرشانت پریہ درشن وغیرہ نے خطاب کیا۔

اس موقع پر جاوید اختر گڈو، عقیل احمد، وجیہ احمد تصور ،چاند منظر امام، سید ہلال اشرف، عبدالسلام امین ،حافظ فیروز عالم ،ڈاکٹرزاہد،شاہد جمیل، محمدافضل،تاج علی، آصف اقبال وغیرہ موجود تھے.

Facebook Comments
Spread the love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply