سڑک حادثوں میں اضافہ سے لوگوں میں سراسیمگی

سمری بختیارپور، ۱۶؍نومبر(صدام حسین) سمری بختیارپور تھانہ علاقہ میں گذشتہ چند دنوں سے سڑک حادثوں کے متواتر کئی حادثے ہونے سے علاقے کے لوگوں میں خوف و ہراس پایا جاتا ہے۔ خاص بات یہ ہے کہ بیشتر حادثے آٹو کی ٹکر سے ہوئے ہیں۔

haadsaآج شام تقریباً ساڑھے چھ بجے نیشنل ہائی وے ۱۰۷ پر بھٹونی چوک کے پاس سونبرسا کی جانب سے آرہے ایک آٹو نے ایک سائیکل رکشا کو ٹکر ماردی۔ اس حادثے میں آٹو رکشا گڈھے میں جا گرا جس سے خراسان کا رہنے والا چمرو یادو نامی شخص شدید طور سے زخمی ہوگیا۔ اس کے سر میں چوٹیں آئی ہیں۔ خون سے لت پت اس شخص کو علاج کے لیے سہرسہ لے جایا گیا ہے۔ اس کی حالت نازک بنی ہوئی ہے۔ اسی سڑک پر آج دن میں بھی ایک حاثہ پیش آیا جب ایک آٹو نے سڑک کنارے کھڑی ایک ٹریکٹر میں ٹکر ماردی۔ قابل ذکر ہے کہ کل بھی سمری بختیار پور ۔سونبسا روڈ پر پہاڑپور کے نزدیک ایک آٹو اور موٹر سائیکل میں سامنے کی ٹکر ہوگئی تھی ، جس میں موٹر سائیکل سوار بری طرح زخمی ہوگیا تھا۔ اسے بہتر علاج کے لیے پٹنہ ریفر کیا گیا ہے۔

اتوار کو ایک  دوسرا حادثہ سمری بختیارپو۔تلیا ہاٹ روڈ پر پہلام کے نزدیک ہوا۔ اس میں بھی ایک آٹو اور موٹر سائیکل میں ٹکر ہوئی، جس کے نتیجے میں ایک شخص زخمی ہوگیا۔ یاد رہے کہ مذکورہ دونوں راستوں پر آٹو اور دوسری گاڑیوں کے سبب اکثر سڑک حادثے رونما ہوتے رہتے ہیں۔ ان حادثوں میں کئی
haadsa1لوگوں کی جانیں بھی جا چکی ہیں۔ اس کے باوجود انتظامیہ کی طرف سے حادثوں میں کمی لانے کے لیے ضروری اقدامات نہیں کیے جارہے ہیں۔ علاقے کے کئی لوگوں کا کہنا ہے کہ ان حادثوں کی ایک بڑی وجہ ڈرائیوروں کا ناتجربہ کاری ہے۔ کچھ لوگ آدھی ادھوری ڈرائیونگ سیکھ کر گاڑی چلانے لگتے ہیں۔ اس کے خلاف جب تک انتظامیہ کارروائی نہیں کرے گی، حادثوں میں کمی نہیں آئے گی۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *