اردو کسی مذہب یا فرقہ کی زبان نہیں ضلع اردو زبان سیل سہرسہ کے زیر اہتمام منعقد تقریری مقابلہ میں ضلع مائنو ریٹی افسر کا خطاب


سہرسہ (نمائندہ ):- محکمہ کابینہ سکریٹریٹ اردو ڈائر کٹو ریٹ پٹنہ کی ہدایت کے مطابق ضلعی سطح پر اردو سیل کے زیر اہتمام مقامی کلا بهون کے سوپر مارکیٹ سہرسہ میں تقریری مقابلہ کا انعقاد کیا گیا. محصول و اراضی آفیسر راشد کلیم انصاری، محکمہ آبکاری کے آفیسر اشرف جمال ، مائنوریٹی افسر روی شنکر ، ریڈ کراس کے صدر ڈاکٹر ابواکلام اور اسکے علاوہ ڈاکٹر معیز الدین نے مشترکہ طور پر شمع جلا کر پروگرام کا آغاز کیا-
اس موقع پر ضلع مائنوریٹی افسر روی شنکر نے خطاب نہ کرتے ہوئے کہاکہ میں بهی نصرت فتح علی، اور غلام علی کی غزلیں سنتا ہوں ، میری طرح ملک کے بہت سارے لوگ اردو ادب اور اردو شاعری سے دلچسپی رکهتے ہیں – انہوں نے کہاکہ اردو اور ہندی ہندوستانی تہذیب کی پہچان ہیں – میں روزانہ اردو اخبار شوق سے پڑهتا ہوں ، آپ لوگ بهی ہندی کی طرح اردو کو عام بول چال میں پهیلائیں – محکمہ آبکاری کے آفیسر محمد اشرف جمال نے کہاکہ اردو کو فروغ دینا ہے تو سب سے پہلے اپنے بچوں کو اردو پڑهائیں اور خاص کر والدین اپنے گهروں میں اردو کی میگزین، رسالے اور اردو اخبارات ضرور لائیں تاکہ انکے بچوں میں اردو پڑهانے کا شوق پیدا ہوگا-
ضلع محصول و اراضی افسر راشد کلیم انصاری نے کہاکہ یہ بہت ہی تشویشناک صورتحال ہے کہ اردو پڑهنے والے بچوں کی تعداد میں گراوٹ آرہی ہے.
تاکہ حکومت نے دوسری سرکاری زبان کیلئے جن منصوبوں کو نافذ کیاہے ہمیں اسکافائیدہ مل سکے اور بچوں میں اردو پڑهنے کے رجحان میں تیزی آئے-
ریڈ کراس کے ضلع صدر ڈاکٹر ابو ا لکلام نے کہاکہ اردو کی ترقی کیلئے حکومت کی سطح پر پروگرام تو کرائے جا رہے ہیں لیکن اسکا بہتر نتیجہ اسی وقت ظاهر ہوگا جب اردو داں طبقہ اسے چیلنج کے طور پر قبول کریں –
انہوں نے مزید کہاکہ سرکاری اور غیر سرکاری اسکولوں میں بنیادی سطح پر اردو پروگرام کا متواتر مقابلہ کیا جانا چاہئیے –


اس موقع پر میٹرک سطح پر اول مقام نوشابہ پروین ،دوسرے مقام پر عظمہ پروین اور تیسرے مقام پر ہما رحمانی، اور انٹر سطح پر اول مقام مہہ جبیں نوری، اور دوسرے مقام پر فرحانہ پروین، اور تیسرے مقام پر محمد آصف اور گریجویشن سطح پر اول مقام ملیحہ ، دوسرے مقام پر روشن پروین اور تیسرے مقام پر انس رحمانی کو نوازا گیا.
انہیں بالتریب5100، 4100،اور 2100 روپے نقد توصیفی اور میڈل سے نوازا گیا- انہوں نے بتایاکہ ترتیب تعلیم کی اہمیت ، اردو زبان کی اہمیت اور اردو غزل کی مقبولیت کے موضوع پر تقریری مقابلہ میں حصہ لیا تها،واضح ہوکہ تینوں سطحوں پر آٹه .آٹه طلبا کو دوم اور سوم مقام حاصل ہوا.


پروگرام میں 5رکنی ٹیم نے طلبہ کا نتیجہ سنایا .ڈاکٹرذاکر حسین، پروفیسر امان اللہ خاں ، ڈاکٹر کوکب سلطانہ نے ججوں کے طور پر فرائض انجام دیتے ہوئے بچوں کی حوصلہ افزائ کی اور مستقبل میں کار کردگی کامظاہرہ کرنے کیلئے کئ ٹپس دیئے. پروگرام کے اخیر میں ضلع اردو سیل کے مترجم قاضی سعادت علی نے شکریہ کی رسم ادا کی.جبکہ نظامت کے فرائض ابو الفرح شازلی نے انجام دیئے – موقع پر محمد محی الدین راعین ، قاری نور اللہ نعمانی، یونیسیف کے ایس ایم سی مظہرالحسن ، مولانا سہراب ،مولانا آفتاب، منصور عالم، مولانا عبد الصمد، ماسٹر احسان عالم، محترمہ انوری خاتون، حافظ و قاری سجاد ندوی، مولانا شمیم اختراشاعتی، مولانا کلیم اللہ،جمال الدین وغیرہ موجود تهے.

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *