فروری میں سمری بختیار پور آئیں گے مولانا ارشد مدنی… اجتماعی شادی کی تقریب بھی ہوگی منعقد

وجیہ احمد تصور کی رپورٹ ✍️

سہرسہ… سمری بختیار پور کے جامع مسجد رانی باغ میں آئمہ کرام کی ایک نشست حضرت مولانا محبوب الرحمن قاسمی کی صدارت میں منعقد ہوئی.

تنظیم آئمہ مساجد کے صدر حافظ محمد ممتاز رحمانی نے بتایا کہ میٹنگ میں اتفاق رائے سے سمری بختیار پور میں فروری مہینے میں جمیعت العلماء کے صدر حضرت مولانا سید ارشد مدنی کی صدارت میں ایک جلسہ منعقد کرانے کا فیصلہ لیا گیا. انہوں نے بتایا کہ جمیعت العلماء کا قیام ملک وقوم کی خدمات کے لئے عمل میں آیا تھا اور اس مقصد پر آج بھی یہ تنظیم عمل پیرا ہے. جمیعت العلماء نے آزادی کی تحریک میں نہ صرف سرگرم کردار ادا کیا بلکہ ملک کی تقسیم کا آخری لمحے تک اس نے سخت مخالفت کیا. حضرت مولانا حسین احمد مدنی نے اس عظیم الشان اور فلاحی تنظیم کو جلا بخشی  اور آج بھی یہ تنظیم مسلمانوں کے مسائل کے حل کے لئے سرگرم عمل ہے. چاہے معاملہ مسلم نوجوانوں کی غیر قانونی گرفتاری کا ہو یا خواتین کی تعلیمات کا سوال ہو، اردو زبان کے فروغ کا عملی اقدامات ہو یا مسلمانوں کے جمہوری، سیاسی، اقتصادی شہری حقوق کا مورچہ ہر جگہ جمیعت العلماء ہند فعال تنظیم کی حیثیت سے سرگرم عمل ہے.
   اس موقع پر حضرت مولانا محبوب الرحمن قاسمی نے کہا کہ تنظیم آئمہ مساجد کے زیر اہتمام اجتماعی شادی کی ایک تحریک چلائی جا رہی ہے جو فروری مہینے میں سمری بختیار پور میں منعقد کی جائیگی. اللہ نے بیٹیوں کو رحمت بنایا ہے مگر لوگ آج اسے زحمت سمجھتے ہیں. آج شادیوں میں ناجائز اور فضول خرچ اتنے بڑھ گئے ہیں کہ جوان لڑکیاں ماں باپ کی دہلیز پر ہی بوڑھی ہورہی ہیں. بغیر جہیز کے شادی کے لئے لوگ تیار نہیں ہو رہے ہیں جس کا نتیجہ ہے کہ جوان بیٹیاں خودکشی جیسے سخت قدم اٹھانے کو مجبور ہو جاتی ہیں غریب کی بیٹیاں سسک سسک کر مرتی رہتی ہیں. لیکن ان حالات میں کچھ ایسی تنظیمیں ہیں جو اجتماعی شادیوں کا انتظام کرکے غریب والدین کے بوجھ کو کم کرنے کی کوشش کرتے ہیں ان ہی تنظیموں میں گجرات کی ایک فلاحی تنظیم ہے جس کی سرپرستی تنظیم آئمہ مساجد کو حاصل ہے اور وہ لوگ فروری ماہ میں غریب لڑکیوں کے شادی کا نظم کریں گے. اس سلسلے میں ضرورت مند حضرات جلد سے جلد رانی باغ مسجد کے امام حافظ محمد ممتاز رحمانی سے رابطہ کر فارم بھر کر جمع کردیں.
Facebook Comments
Spread the love
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

Leave a Reply