نجیب کو انصاف دلانے کے لیے ایس ڈی پی آئی کا احتجاجی مظاہرہ

نئی دہلی( نامہ نگار):
سوشل ڈیموکریٹک پارٹی آف انڈیا (ایس ڈی پی آئی) نے جواہرلعل نہرو یونیورسٹی کے لاپتہ طالب علم نجیب کو انصاف دلانے کے لیے ملک گیر سطح پر زبردست احتجاجی مظاہروں کا انعقاد کیا۔ جواہر لال یونیورسٹی (جے این یو) سے گذشتہ دو ہفتوں سے لاپتہ نجیب احمد کے لیے انصاف کے مطالبے کے ساتھ نئی دہلی میں جنتر منتر پر پارٹی کے قومی نائب صدر ایڈووکیٹ شرف الدین احمد کی قیادت

احتجاجی مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے ایس ڈی پی آئی کے قومی نائب صدر ایڈووکیٹ شرف الدین احمد
احتجاجی مظاہرہ سے خطاب کرتے ہوئے ایس ڈی پی آئی کے قومی نائب صدر ایڈووکیٹ شرف الدین احمد

میں ایک زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا گیا اور صدرجمہوریۂ ہند کو میمورینڈم پیش کیا گیا۔ اس مظاہرے میں خاص طور پر نجیب کی والدہ محترمہ فاطمہ انیس ، نجیب کے بھائی مجیب اور ان کے رشتہ دار شریک رہے۔ اس موقع پر نجیب کی والدہ نے جے این یو انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ ان کے بیٹے کو فوری طور پرتلاش کیا جائے۔ انہوں نے ایس ڈی پی آئی کی جانب سے نجیب کو انصاف دلانے کے لیے مطالبہ پر مشتمل احتجاجی مظاہرے کے انعقاد کا شکریہ ادا کیا۔ واضح رہے کہ۱۴؍اکتوبر کو اکھل بھارتیہ ودیارتھی پریشد (اے بی وی پی) کے ممبران نے جے این یو کے ماہی مانڈوی ہاسٹل میں نجیب کے کمرے میں گھس کر ہاسٹل وارڈن کی موجودگی میں اس پر حملہ کیا تھا۔ اس کے باوجود وارڈن نے حملہ آوروں پر کسی قسم کی کوئی کارروائی نہیں کی۔ احتجاجی مظاہرہ کے دوران ایس ڈی پی آئی کے قومی نائب صدر نے اپنی تقریر میں کہا کہ نجیب پر حملہ ہونے کے بعد ان کا صفدر جنگ اسپتال میں علاج کرایا گیا اور پھر ہاسٹل پہنچا دیا گیا۔ سیاسی دباؤ کے سبب حملہ آوروں پر کوئی کارروائی نہ کرکے الٹا نجیب احمد کے خلاف کارروائی کی گئی۔ نجیب کی ماں۱۵؍اکتوبرکو نئی دہلی پہنچ گئی لیکن انہیں نجیب ہاسٹل کے کمرے میں نہیں ملا۔ اس دن سے آج کی تاریخ تک نجیب کا کوئی پتہ نہیں ہے۔ اس معاملے میں سست رویہ اختیار کرنے پر جے این یو ٹیچرس ایسوسی ایشن نے بھی مذمت کی ہے۔ اس موقع پر پارٹی کے جنرل سکریٹری محمد شفیع نے کہا کہ

مظاہرہ کے دوران خطاب کرتے ہوئے ایس ڈی پی آئی کے قومی جنرل سکریٹری محمد شفیع
مظاہرہ کے دوران خطاب کرتے ہوئے ایس ڈی پی آئی کے قومی جنرل سکریٹری محمد شفیع

نجیب احمد کی گمشدگی کی وجہ سے جے این یو کے طلبہ اور نجیب کے اہل خانہ بے حد پریشان ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جے این یو انتظامیہ اور پولیس سے عوام کا بھروسہ ٹوٹ گیا ہے۔ اس لیے ایس ڈی پی آئی نے اس معاملے میں ملک گیر سطح پر احتجاجی مظاہروں کے ذریعے انصاف دلانے کی آواز بلند کی ہے تاکہ نجیب کے معاملہ میں جے این یو انتظامیہ اور پولیس متحرک ہو اور ان کی برآمدگی کے لیے ٹھوس اقدام کیے جاسکیں۔ اس مظاہرے میں ایس ڈی پی آئی کے قومی جنرل سکریٹری الیاس محمد تمبے، پاپو لر فرنٹ آف انڈیا کے پی آر او محمد عارف، کیمپس فرنٹ آف انڈیا کے قومی صدر عبد الناصر، آل انڈیا امامس کونسل، دہلی کے ریاستی صدر مفتی ارشاد سمیت کثیر تعداد میں پارٹی کارکنان نے شرکت کی۔ دہلی کے علاوہ دیگر کئی ریاستوں میں بھی ایس ڈی پی آئی کی جانب سے احتجاجی مظاہروں کا انعقاد کیا گیا۔

صدر جمہوریہ تک پہنچانے کے لیے پولیس کو میمورنڈم سونپتے ہوئے مظاہرین
صدر جمہوریہ تک پہنچانے کے لیے پولیس کو میمورنڈم سونپتے ہوئے مظاہرین

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *